کابل میں دہشتگردی،گاڑی پر حملے میں دو خواتین ججز جاں بحق

افغان دارالحکومت کابل میں دہشتگرد کارروائیاں جاری ہیں،حملہ آوروں نے ججز کی گاڑی کو بھی نہ بخشا، خاتون ججوں کی گاڑی پر حملے میں 2 خواتین ججز جاں بحق اور 2 شدید زخمی ہو گئیں،کابل کے علاقے قلعہ فتح اللہ میں گھات لگائے موٹرسائیکل سوار نامعلوم دہشت گردوں نے خاتون ججوں کی گاڑی پر اچانک حملہ کر دیا۔

دہشت گردوں کی فائرنگ سے دو خواتین ججز موقع پر ہی ہلاک ہو گئیں جبکہ دو شدید زخمی ہوگئیں جسے قریبی اسپتال منتقل کر دیا گیا،گزشتہ روز دارالحکومت کابل اور بغلان میں سڑک کنارے نصب بم دھماکوں میں تین پولیس اہلکار جاں بحق ہوئے تھے، صوبہ قندھار میں بھی دھماکا ہوا تھا۔

گزشتہ روز صوبے ہرات میں طالبان نے پولیس کی گاڑی کو نشانہ بنایا تھا، حملے میں تیرہ پولیس اہلکار جاں بحق ہوگئے، پولیس ترجمان کے مطابق طالبان کے تین جنگجوؤں نے پولیس اہلکاروں پر حملہ کیا۔

گذشتہ دو روز کے دوران قندوز اور قندھار ، ہلمند میں طالبان کے حملوں میں افغان نیشنل ڈیفنس اور سیکیورٹی فورسز کے چودہ اہلکار جاں بحق ہوگئے تھے۔

افغان میڈیا کے مطابق گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران اکیس صوبوں میں فوج اور طالبان کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں،وزارت دفاع کے مطابق جھڑپوں میں ایک سو اٹھارہ طالبان ہلاک اور تیس سے ​​زائد زخمی ہوئے ہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>