شادی کے اصرار پر نوجوان نے خاتون دوست کو قتل کرکے دیوار میں چُن دیا

شادی کے اصرار  پر نوجوان نے خاتون دوست کو قتل کرکے دیوار میں چُن دیا

بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے تیس سالہ نوجوان اپنی بتیس سالہ دوست سے اتنا بیزار ہوا کہ مسلسل شادی کے اصرار پر اسے قتل کردیا، اور اپنے فلیٹ کی دیوار میں چُن دیا،گزشتہ سال کا معاملہ اب سامنے آیا جس پر پولیس نے تحقیقات شروع کیں اور معاملے کی گتھی سلجھائی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق پولیس نے صحافیوں کو بتایا کہ 30 سالہ ملزم نے اپنی 32 سالہ خاتون دوست کو شادی کا اصرار کرنے پر بے دردی سے قتل کیا،خاتون کو گذشتہ برس اکتوبر میں قتل کیا گیا تھا اور لاش کی باقیات ملزم کے فلیٹ سے چند روز پہلے برآمد کی گئی ہیں۔

بیان میں کہا گیا کہ ملزم اور مقتولہ کا ایک دوسرے کے ساتھ پانچ برس سے تعلق تھا، خاتون کو آخری مرتبہ 21اکتوبر کو ملزم کے ساتھ دیکھا گیا تھا جس کے باعث اسے شامل تفتیش کیا گیا،جب مقتولہ کے خاندان نے ملزم سے اس خاتون کے بارے میں پوچھا تو اس نے کہا کہ وہ گجرات گئی ہوئی ہیں۔ بیان میں لکھا ہے کہ اس کے بعد خاتوں کے گھر والوں نے پولیس سے رابطہ کیا اور پولیس نے اس شخص کو گرفتار کرکے لاش برآمد کرلی۔

پولیس نے ملزم کو گرفتار کرنے کے بعد اس کے خلاف انڈین پینل کوڈ کی مختلف دفعات کے تحت قتل اور دیگر جرائم کرنے کا مقدمہ درج کر لیا،بھارت میں سفاکی کے اس طرح کے  واقعات سامنے آتے رہتے ہیں جہاں ذرا ذرا سی بات پرانسان کو موت کے گھاٹ اتار دیا جاتا ہے۔

گزشتہ سال کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں قتل کے روزانہ اوسطاً80 اور جنسی زیادتی کے91 واقعات رونما ہوتے ہیں،اور اغوا کے 289واقعات پیش آتے ہیں،جرائم کے اعدادو شمار یکجا کرنے والے سرکاری ادارہ نیشنل کرائم ریکارڈز بیوروکی رپورٹ کے مطابق بھارت میں سال 2018میں اوسطاً ہر روز 91 خواتین کے خلاف جنسی زیادتی کی شکایت درج کرائی گئی۔

این سی آر بی کی رپورٹ کے مطابق سن2018میں خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے33356 مقدمات درج کرائے گئے۔ 2017 میں یہ تعداد32559تھی،خواتین کے خلاف جرائم کے مجموعی طور پر تین لاکھ 78ہزار 277معاملات درج کیے گئے۔ 2017 میں یہ تعداد تین لاکھ 59 ہزار 894 تھی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>