بی جے پی حکومت نے ویب سیریز "تانڈو” کے فلمسازوں پر پرچہ کٹوا دیا

بی جے پی حکومت نے ویب سیریز "تانڈو" کے فلمسازوں  پر پرچہ کٹوا دیا

بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کیوں کیا؟ بی جے پی حکومت نے ویب سیریز "تانڈو” کے فلمسازوں  پر پرچہ کٹوا دیا

میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی انتہا پسند حکمران جماعت بی جے پی ویب سیریز "تانڈو”  میں کرپٹ سیاستدان، گندی سیاست، پولیس کا ظالمانہ رویہ، طلباکو اکسانا اور کسانوں کی زمینیں ہتھیانا، حکومت اور میڈیا کا گٹھ جوڑ، یہ سب دکھانے پر آگ بگولہ ہو گئی اور ویب سیریز کے فلمسازوں پر پرچہ کٹوا دیا۔

بھارتی ویب سیریز "تانڈو” میں انتہا پسند حکومت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کرنے اور بھارت میں اقلیتوں پر کیے جانے والے مظالم دکھانے پر پر انتہا پسند حکومت بے جے پی کے رہنما رام قدم نے فلمسازوں کے خلاف مقدمہ درج کرواتے ہوئے اپنے موقف میں کہا کہ ویب سیریز کی وجہ سے ہندووں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔

انتہا پسند بھارتی حکومت بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما رام قدم کا پولیس کو درج کروائے گئے مقدمے میں مزید کہنا تھا کہ ویب سیریز میں وزیر اعظم کا کردار نبھانے والا انتہائی گندی زبان استعمال کر رہا ہے جس کا اشارہ ملک کے وزیر اعظم نریندر مودی کی طرف ہے، جو حقائق کے برخلاف ہے۔

رواں سال 15 جنوری سے ایمازون پر چلنے والی بھارتی ویب سیریز "تانڈو” میں دکھایا گیا کہ کسانوں کی زمینیں کیسے ہتھیائی جاتی ہیں؟ طلباکو اکسایا اور پھر ان پرتشدد کیاجاتا ہے،اقلیتوں پرمظالم ڈھائے جاتے ہیں،حکمران جماعت اپنے مفاد کیلئے لوگوں کو بلیک میل اور قتل تک کر دیتی ہے اور اپنی مذموم مقاصد حاصل کرنے کے لئے ہر حد تک چلی جاتی ہے۔

اس کے علاوہ ویب سیریز میں میڈیا ہاؤسز اور حکومت کا گٹھ جوڑ بھی دکھایا گیا ہے، بھارتی ویب سیریز میں بھارتی میڈیا کے ایک ایسے اینکر کو دکھایا گیا ہے جس کو پہلے سے تمام بھارتی سازشوں کا علم ہوتا ہے، جس کی زندہ مثال پچھلے دنوں بھارتی اینکر ارنب گوسوامی کی لیک ہونے والی واٹس ایپ چیٹ ہے، جسے پلوامہ حملے اور بالاکوٹ کے فضائی حملے کا 3 دن پہلے سے ہی علم تھا۔

پندرہ جنوری سے ایمازون پر نشر ہونے والی بھارتی ویب سیریز "تانڈو” میں معروف بھارتی اداکار سیف علی خان مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں ، سیف علی خان کے علاوہ ویب سیریز میں ڈمپل کپاڈیہ، ذیشان ایوب، سنیل گروور، تگمانشو ڈھولیا، کمود مشرا اور دیگر اداکار شامل ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >