بھارت کی پاکستان مخالف مہم بے نقاب،تھنک ٹینک بورڈ کے تمام ارکان مستعفی

بھارت کی پاکستان مخالف مہم بے نقاب۔۔ ڈس انفولیب کی رپورٹ آتے ہی تھنک ٹینکس کے تمام کردار دم دبا کر بھاگنے لگے۔۔ تھنک ٹینکس کے بورڈ ارکان مستعفی

بھارت کی پاکستان مخالف پراپیگنڈہ مہم مزید ایک بار پھر دنیا کے سامنے آگئی، ساؤتھ ایشیا ڈیموکریٹک فورم کے کردار دم دبا کر بھاگنے لگے،نام نہاد تھنک ٹینکس کے تمام بورڈ ارکان مستعفی ہوگئے، تھنک ٹینک سیڈف دو ہزار گیارہ میں قائم ہوا،براہ راست وزیراعظم مودی سے رابطہ تھا۔

یورپین یونین ڈس انفو لیب میں ذکر کیے گئے تھنک ٹینک، این جی اووز ایک ایک کر کے پاش پاش ہونے لگے، ڈس انفولیب کی رپورٹ آتے ہی نام نہاد جعلی تھنک ٹینک کے تمام بورڈ ممبرز نے استعفیٰ دے دیا۔۔

اکانومسٹ ہو یا فارن پالیسی میگزین، بھارت کا مکروہ چہرہ ہر جگہ بے نقاب کررہی ہے، برطانوی پارلیمان میں بحث ہو یا اقوام متحدہ انسانی حقوق رپورٹ، بھارتی سیاہ کاریوں کی قلعی کھل گئی ، ڈس انفو لیب کی رپورٹ آتے ہی اس تھنک ٹینک کے تمام کردار دم دبا کر بھاگنے لگے، نام نہاد جعلی تھنک ٹینک کے تمام بورڈ ممبرز نے استعفیٰ دے دیا، سیڈف کے بورڈ ممبرز میں مستعفی ہونے والی ایک اہم رکن کرسچین فیئر بھی تھی۔

فراڈ تھنک ٹینک سیڈف 2011ء میں وجود میں لایا گیا،اور ایک عرصے سے پاکستان کو ہدف بنا رہا تھا۔ فورم تنقیدی پروگراموں کے انعقاد کے لئے لابنگ کرتا آ رہا ہے، برسلز میں واقع اس تھنک ٹینک کا تعلق نریندر مودی سے براہ راست منسلک سراواستو گروپ سے ہے، یہ فورم عرصہ دراز سے پاکستان کو ہدف بنانے کیلئے تنقیدی پروگرامز کے انعقاد کے لئے لابنگ کرتا آ رہا ہے، ساؤتھ ایشیاء ڈیموکریٹک فورم یا سیڈف بھی ہندوستان کے پاکستان مخالف پروپیگنڈے کا آلہ کار تھا۔

اس سے قبل وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے بتایا تھا کہ بھارت نے پاکستان مخالف پروپیگنڈے کے لیے 750 سے زائد جھوٹی نیوز ویب سائٹس کو استعمال کیا،وزیر خارجہ نے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی امور معید یوسف کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا تھا کہ 14 نومبر کو پریس کانفرنس میں بھارت کے خلاف ڈوزیئر کے تفصیلات شیئر کیں، ذوزیئر میں ٹھوس شواہد فراہم کیے جس کا بھارت جواب نہیں دے سکا،ڈوزیئر میں واضح کیا کہ بھارت پاکستان کے خلاف مختلف تنظیموں کو معاونت فراہم کر رہا ہے،اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب نے سیکیورٹی کونسل کے مستقل ممبران ممالک کو بھی ڈوزیئر پیش کیا گیا، یورپی یونین کے ممبران کے علاوہ دیگر عالمی برادری کو بھی ڈوزیئر پیش کیا گیا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ یورپین پارلیمںٹ ٹوڈے کے نام سے ویب سائٹ بنائی گئی، جعلی میگزینز اور تھنک ٹینکس کے ذریعے پاکستان مخالف پراپیگنڈا کیا گیا،بھارتی نیوز ایجنسی اے این آئی جعلی معلومات پھیلانے میں ملوث ہے، جعلی آرگنائزیشنز کو انڈیا فنڈنگ کرتا ہے،پاکستان کے خلاف ایک بدنام مہم شروع کی گئی ہے، فیٹف میں بھی پاکستان مخالف ایک مہم چلائی گئی لیکن ہم نے دنیا بھر میں بھارت کو ایکسپوز کیا، پاکستان بھارت کا ہر سطح پر مقابلہ کر رہا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >