بھارت میں غربت کی انتہا، باپ کمسن بیٹے کی لاش کو تھیلے میں ڈال کر لیجانے پر مجبور

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ریاست بہار میں 13 سالہ بچہ کشتی میں سوار تھا جو کہ پانی میں ڈوب گیا۔ اس کے غریب والد کو جب بیٹے کی لاش ملی تو اس نے پولیس کو اطلاع دی جس پر پولیس نے مزید کارروائی کے لیے لاش کو اسپتال لیجانے کا کہا۔ باپ لاش کو اسپتال لیجانے کیلئے ایمبولنس کا انتظام نہ کرسکا تو لاش کو پلاسٹک کے تھیلے میں ڈال کر لے گیا۔

تفصیلات کے مطابق ریاست بہار کے علاقے کٹیہار سے تعلق رکھنے والے شہری لیرو یادو نے اپنے مردہ بیٹے کی لاش اسپتال لے جانے کے لیے ایمبولینس مانگی تو ریسکیو اداروں نے گاڑی فراہم کرنے سے انکار کر دیا۔ غریب باپ خود بھی اتنی سکت نہیں رکھتا تھا کہ اپنے تئیں انتظام کر پاتا تو لاش کو پلاسٹک کے تھیلے میں ڈال کر لے گیا۔

اپنے بیٹے کی لاش کو تھیلے میں ڈال کر تین کلومیٹر پیدل چل کر اسپتال پہنچا، مگر ڈاکٹرز نے بتایا کہ بہت دیر ہوچکی ہے کیونکہ بچہ ڈوب کر ہلاک ہوگیا تھا۔ اسپتال میں موجود عینی شاہدین کے مطابق متاثرہ شخص نے ایمبولینس نہ ملنے کے بعد پولیس حکام سے گاڑی فراہم کرنے کی درخواست کی مگر اہلکاروں نے اُسے گاڑی دینے سے صاف انکار کردیا۔

مذکورہ واقعہ سامنے آنے کے بعد پولیس حکام حرکت میں آئے اور افسران نے نوٹس لے کر موبائل فراہم نہ کرنے کی وجہ دریافت کی۔ ایس ڈی پی کٹیہار کے مطابق معاملے کا نوٹس لے کر تحقیقات کی جارہی ہیں کہ آخر کیوں مذکورہ شخص کو ایمبولینس اور پولیس موبائل فراہم نہیں کی گئی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >