غداری کا الزام ثابت ہونے پر سعودی عرب میں تین فوجی افسران کو سزائے موت

سعودی عرب میں غداری کا جرم ثابت ہونےوالے تین فوجی افسران کو سزائے موت سنادی گئی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سزائے موت پانےوالے تینوں فوجی افسر وزارت دفاع میں فرائض سرانجام دیتے تھے، ملک و قوم سے غداری کے الزامات ثابت ہونے کے بعد تینوں افسران کو موت کی سزا سنائی گئی۔

رپورٹس کے مطابق وزارت دفاع کے ان افسران کے خلاف غداری کے الزامات پر تحقیقات کی جارہی تھیں، دوران تحقیقات انکشاف ہوا کہ ان تین فوجیوں نے ریاست و قوم کے مفادات کے خلاف کام کیا اور دشمن ملکوں کے ساتھ رابطے و تعاون میں بھی ملوث پائے گئے۔

سعودی عرب کی وزارت دفاع نے تینوں فوجیوں کو سزائے موت سنائے جانے کی تصدیق کردی ہے، وزارت دفاع کے مطابق تحقیقات کے بعد ان فوجیوں کو سزائے موت سنائی گئی ہے جس کے بعد  شاہی حکومت کی جانب سے ان تینوں کیلئے ڈیتھ وارنٹس بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔

وزارت دفاع کے مطابق غداری جیسے سنگین الزامات کے ثابت ہونے کے بعد سزائے موت سنائی گئی ہے۔

  • ڈان لیک معافی کے بدلے اور مریم کی وفاداری کے عوض سعودیہ میں نوکری لینے والا راحیل شریف کہاں ہے امید ہے وہ اپنی مالکہ کے قطری اور عربی کلائنٹس کی بدولت ٹھیک ہی ہو گا

    وفاداری بشرط استواری اصل ایماں ہے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >