’فوربز 30 انڈر 30‘ کی فہرست میں 2 پاکستانی لڑکیوں نے بھی جگہ بنا لی

معروف امریکی جریدے فوربز نے اپنے اپنے شعبہ جات میں بہترین کارکردگی دکھانے والے 30 یورپی افراد کی فہرست جاری کی ہے جس میں 30 سال یا اس سے کم عمر کے لوگوں کو شامل کیا گیا ہے اس فہرست کا نام ہے "30 انڈر30″۔

اس فہرست میں شوبز، ریٹیل ای کامرس، کھیل، میڈیا مارکیٹنگ، مینو فیکچرنگ اینڈ انڈسٹریز سمیت دیگر شعبوں پرمشتمل اس فہرست میں 2 پاکستانی نژاد لڑکیوں سمیت کئی مسلمان لڑکیاں اور لڑکے شامل ہیں۔

ہر سال جاری کی جانے والی اس 30انڈر30 نامی فہرست میں ان افراد کا نام شامل کیا جاتا ہے جنہوں نے مختصرمدت میں نمایاں مقام حاصل کیا ہو۔

پہلی ریٹیل اور ای کامرس کی کیٹیگری میں شامل پاکستانی نژاد شیف زہرہ خان لندن میں کامیابی کے ساتھ اپنا "فیا کیفے” چلا رہی ہیں، وہ 2 بچوں کی ماں ہیں اور ان کے کیفے میں روایتی کے علاوہ دیگرممالک کے مزیدار کھانے بھی دستیاب ہیں۔

ان کے پاس 30 لوگوں کا اسٹاف کام کرتا ہے اور اس کاروبار سے حاصل ہونے والی آمدنی کا 10 فیصد خواتین کی فلاح و بہبود اور انہیں مزید طاقتور بنانے پر خرچ کیا جاتا ہے۔

اس فہرست میں شامل دوسری پاکستانی نژاد آمنہ اختر ہیں جنہیں ”سوشل امپیکٹ” کے تحت 30 انڈر 30 کا حصہ بنایا گیا۔

وہ ” گرل ڈریمر” نامی ادارہ چلاتی ہیں جہاں ہر رنگ ونسل اورمذہب سے تعلق رکھنے والی خواتین کو تربیت اور کام کے مواقع فراہم کیے جاتے ہیں۔اس کمپنی میں 1200 مرد وخواتین ملازم ہیں تاہم بنیادی مقصد خواتین کی خود مختاری ہے۔

’فوربز 30 انڈر 30‘ کی فہرست میں اس سے پہلے بھی پاکستانی جگہ بنا چکے ہیں

  • باہر کے ملکوں میں رہنے والے اور کام کرنے والوں کو پاکستانی نہ کہین .
    پاکستان میں کس کو نامزد کیا ہے اس کی بات کریں.
    باہر کے ملکوں کا سسٹم ان لوگوں کو کامیاب بناتا ہے.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >