روس نے جاسوسی کرنے کے الزام میں یوکرائنی سفاتکار کو گرفتار کر لیا

روسی حکومت نے جاسوسی کرنے کے الزام میں یوکرائن کے سفارت کار کو حراست میں لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق ماسکو میں جاسوسی کے شُبے میں ایک یوکرائنی سفاتکار کو گرفتار کر لیا گیا۔

روسی خبر رساں ایجنسی کے مطابق فیڈرل سیکیورٹی سروس (ایف ایس بی) نے سفارت کار اولیک سینڈر سوسونیوک کواس وقت گرفتار کیا، جب وہ ایک روسی شہری سے روس کے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ڈیٹا بیس میں موجود خفیہ معلومات حاصل کرنے کی کوشش کر رہے تھے۔

یوکرائنی وزارت خارجہ نے سوسونیوک کو حراست میں لیے جانے کی تصدیق کی۔ یوکرائنی وزارت خارجہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ اولیک سینڈر کو چند گھنٹے حراست میں رکھ کر سینٹ پٹس برگ میں واقع یوکرائنی سفارت خانے واپس بھیج دیا گیا۔

یوکرائنی وزارت خارجہ کی جانب سے سوسونیوک کی حراست کو سفارتی آداب کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ مزید کہا کہ روسی فیڈریشن میں ایک سفارت کار کے ساتھ اس طرح کا سلوک نا مناسب ہے، کیوں کہ غیر ملکی سفارت کاروں کو بین الاقوامی قوانین کے مطابق برتاؤ کیا جاتا ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>