ریاستی اسمبلیوں کے انتخابات میں مودی کی جماعت کو شکست

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی جماعت بھارتی جنتا پارٹی کو ودھان اسمبلی کے انتخابات کے دوران تین ریاستوں سے شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارت کی پانچ ریاستوں تامل ناڈو، مغربی بنگال، آسام، کیرالہ اور پڈو چیری میں قانون ساز اسمبلی کیلئے انتخابات ہوئے جس کے نتائج بھارتی وزیراعظم اور حکمران جماعت کیلئے سخت پریشان کن ہیں۔

نتائج کے مطابق آسام اور پڈو چیری میں بی جے پی اپنی عزت بچانے میں کامیاب رہی اور ان ریاستوں میں بی جے پی کے اتحاد”نیشنل ڈیموکریٹک الائنس” کو فتح حاصل ہوئی ہے۔

جبکہ دیگر تین ریاستوں میں بھارتی جنتا پارٹی کو مخالف جماعتوں نے بری طرح شکست سے دوچار کیا ہے۔

مغربی بنگال کی 292 نشستوں میں سے ابھی تک کے نتائج کے مطابق 214 پر ترنمول کانگریس کے نمائندوں نے فتح حاصل کی جبکہ بی جے پی کے حصے میں صرف 76 نشستیں آئیں، تامل ناڈو میں دراویدیئن پروگریسیو فیڈریشن کو 138 سیٹوں پر کامیابی حاصل ہوئی اس ریاست میں بی جے پی کو نہ ہونے کے برابر نمائندگی ملی ہے۔

کیرالہ میں بی جے پی نے 30 سے زائد سیاسی جماعتوں کے ساتھ ایک انتخابی اتحاد قائم کیا تھا مگر اس اتحاد کے حصے میں صرف 3 سیٹیں ہی آئیں، لیفٹ ڈیموکریٹک فرنٹ نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی جماعت کو دھول چٹاتے ہوئےکل 140 نشستوں میں سے81 پر کامیابی حاصل کی ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >