ٹھیلے سے دکان کا سفر، سعودی خاتون سبزی فروش کے ساتھ ہتک آمیزواقعہ زندگی بدل گیا

سعودی خاتون سبزی فروش کے ساتھ ہتک آمیز واقعہ، ٹھیلے سے دکان تک کا سفر

سعودی سبزی فروش خاتون کی زندگی بدل گئی، شہری کے توہین آمیز واقعے پر شہزادہ احمد بن فہد نے ایکشن لے لیا، خاتون کو دکان الاٹ کرنے کے احکامات جاری کردیئے، کہانی کچھ یوں ہے کہ سڑک کنارے سبزی بیچنے والی خاتون کی شہری نے ویڈیو بنائی سوشل میڈیا پر ڈال دی،ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

ویڈیو دیکھ کر جہاں سعودی عوام نے غصے کا اظہار کیا وہیں ویڈیو ایوان اقتدار تک جاپہنچی، ویڈیو دیکھنے پر ڈپٹی گورنر شہزادہ احمد بن فہد بن سلمان نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے متاثرہ خاتون سے ملاقات کرکے انہیں حکومت کی طرف سے ایک دکان الاٹ کرنے کے احکامات جاری کردییے۔

دمام کے مرکزی بازار میں ام زیاد کو دکان الاٹ کر دی گئی ہے جو ان کے گھر سے صرف 10 منٹ کی مسافت پر ہے۔ وہ اپنی دکان پر پہلی مرتبہ آئیں تو گاہکوں کی طرف سے والہانہ استقبال کیا گیا جس پر خاتون خوشی سے نہال ہوگئی، خریداروں نے بھی بڑی تعداد میں خاتون کی دکان کا رخ کیا۔

مقامی تاجر ام زیاد کو ان کی دکان کے لیے سبزیاں اور فروٹ فراہم کرنے لگا،مشرقی گورنری کی انتظامیہ نے بھی ان کی ہر ممکن مدد کی اور ایک دن کے اندر اندر دکان تیار کر کے ام زیاد کے حوالے کردی گئی۔

شہزادہ احمد بن فہد نے کہا دکان دینے کا مقصد خاتون باعزت ذرائع سے روزگار فراہم کرنا ہے،کسی شخص کو سوشل میڈیا کے ذریعے دوسروں کا مذاق اڑانے اور بے عزتی کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

خاتون ام زیاد نے بتایا کہ جس شخص نے ان کی ویڈیو بنائی تھی وہ اکثر کالونی میں اس کے ٹھیلے پر آتا رہتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس شخص کے قریب آنے پر حیران تھیں، انہیں کسی کی ہمدردی کی کوئی ضرورت نہیں، ان کا کام اور محنت ان کے لیے فخر کا بہتر ذریعہ ہے،خواہش ہے کہ وہ اپنا سودا مناسب قیمت پر لیکن معیاری طریقے سے فروخت کریں اور انہیں روزانہ 100 ریال سے زیادہ کمانے کا کوئی لالچ نہیں،ام زیاد کے 9 بچے ہیں اور وہ ایک چھوٹے سے گھر میں رہتی ہیں۔

ام زیاد نے کہا کہ میری ویڈیو بنانے والے شخص کو جب پولیس نے طلب کیا تو مجھے ڈر تھا کہ شاید میرے ٹھیلے کی وجہ سے مجھے بھی بلایا جائے گا اور میں ویڈیو سامنے آنے کے بعد عام لوگوں کے لیے گفتگو کا موضوع بن گئی تھی،خاتون کی کسمپرسی کی ویڈیو بنا کر اس کا مذاق اڑانے والے شخص کو گرفتار کرکے کارروائی شروع کردی گئی ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>