مودی کی توجہ تنقید دبانے پرزیادہ کورونا کنٹرول کرنے پر کم ہے، برطانوی جریدہ

مودی کی توجہ تنقید دبانے پرزیادہ کورونا کنٹرول کرنے پر کم ہے، دی لانسیٹ

بھارتی وزیراعظم کی توجہ تنقید دبانے پر زیادہ کورونا کو کنٹرول کرنے پر کم ہے، دنیا بھر کے مشہور میڈیکل جریدے دی لانسیٹ نے بھارتی وزیراعظم کا پول کھول دیا، کہا بھارت میں کورونا نے تباہی مچائی ہوئی ہے، جس کی وجہ مودی کی ناقص پالیسیوں کو ٹھہرایا جارہاہے۔

اب بھی بھارتی وزیراعظم کورونا وبا پر قابو پانے کے بجائے ٹوئٹر پر خود پر ہونے والی تنقید کو دبانے کی کوششوں میں ہیں، یہ کوشش قابل معافی نہیں ہے۔

رپورٹ کے مطابق انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ میٹرکس اینڈ ایویلیواشن کے اندازوں کے مطابق انڈیا میں کورونا وبا کی وجہ سے اموات کی تعداد یکم اگست تک دس لاکھ تک جا سکتی ہے،لانسیٹ کے مطابق کورونا کے خلاف ابتدائی کامیابی کے بعد سے حکومت کی ٹاسک فورس اپریل تک ایک بار بھی نہیں ملی۔

جریدے نے کہا کہ اب وبا بڑھتی جارہی ہے اور بھارت کو نئے اقدامات کرنا ہوں گے،حکومت اپنی غلطیوں کو قبول کرکے شفافیت کے ساتھ ملک کو چلاتی ہے یا نہیں کامیابی کا انحصار اسی بات پر ہوگا۔

بھارت میں کورونا کے وار جاری ہیں،مسلسل پانچویں روز چار لاکھ سے زائد کیسز اور چار ہزار بانوے اموات رپورٹ ہوئیں۔

مہاراشٹر میں ریکارڈ آٹھ سو چونسٹھ اموات اور تریپن ہزار سے زائد کیسز سامنے آگئے، جبکہ اترپردیش ، دہلی ، راجستھان ، چھتیس گڑھ ، گجرات میں کیسز میں اضافہ ہوگیا، اسپتالوں پر بوجھ بڑھ گیا، آکسیجن ہے نہ ہی متاثرین کے لئے بیڈز کا انتظام، قبرستان اور شمشان گھاٹ میں بھی صورتحال سنگین ہے۔

گوا میں کورونا کیسز میں مسلسل اضافے کے باعث آج سے پندرہ روز کا لاک ڈاؤن لگادیا گیا، ماہرین تیسری لہر کا خدشہ ظاہر کردیا، جبکہ اپوزیشن جماعت کانگریس کی جانب سے مسلسل لاک ڈاون کا مطالبہ کیا جارہاہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >