مسلم برطانوی رکن پارلیمنٹ ساجد جاوید نے اسرائیلی مظالم کو انکا کا حق قرار دے دیا

مسلم برطانوی رکن پارلیمنٹ ساجد جاوید نے اسرائیلی مظالم کو انکا کا حق قرار دے دیا

پاکستانی نژاد برطانوی رکن پارلیمنٹ اور سابق چانسلر ایکسچیکوئر ساجد جاوید نے فلسطین پر اسرائیل کی جانب سے کیے جانے والے مظالم کو اسرائیل کا حق قرار دے دیا۔

انہوں نے کہا کہ فرض کریں کہ آپ لندن میں مقیم ہیں اور دہشت گرد آپ کے اہلخانہ کے پڑوس میں ہزاروں راکٹ فائر کر رہے ہیں۔ تب آپ کا خیال ہو گا کہ حکومت کو ہر ممکن طاقت استعمال کرتے ہوئے آپ کے گھروالوں کو ان دہشتگردانہ حملوں سے بچانا چاہیے۔

ساجد جاوید نے مزید کہا کہ یہ اسرائیل کا حق ہے کہ اپنے دفاع کو یقینی بنانے کیلئے اور اپنے لوگوں کو محفوظ رکھنے کے لیے جو بن پائے وہ کرے۔

انہوں نے کہا کہ دیرپاامن قائم کرنے کا واحد حل بات چیت اور اس پرتشدد عمل کی روک تھام ہے۔

مسلم برطانوی رکن پارلیمنٹ ساجد جاوید نے اسرائیلی مظالم کو انکا کا حق قرار دے دیا

  • ایک تو ہمارا چوتیا میڈیا اور اب سیاست پی کے اسکو بار بار مسلم کہتے ہیں. اسکا باپ ضرور مسلمان تھا مگر یہ خود اپنے آپ کو ملحد کہتا ہے اور اسکا اسلام یا کسی بھی مذہب سے اتنا ہی تعلق ہے جتنا نواز شریف کا شرافت سے

  • یہ تو ہماری بے وقوفی ہے جو ہر مسلمانوں جیسے نام رکھنے والوں پر فخر کرنے لگتے ہیں کی ایک پاکستانی نزاد برطانیہ میں مئیر ، منتخب ہو گیا، لارڈ بن گیا ، ممبر پارلیمنٹ بن گیا ، نہ معلوم اس میں ہماری فخر کی کیا بات ہے،

    یہ ہی ان کی حقیقت ہے – یہ جن کا کھاتے ہیں ان ہی کے وفا دار ہیں ، یہود و نصاریٰ کے جوتے چاٹنے والے اس سے زیادہ اور کیا کہہ سکتے ہیں

  • He drinks beer, his wife is Christian and says that the only religion practiced in his home is Christianity. This is what happens to the children of a majority of muslimimmigrants to US and Europe. There future generations assimilate into the dominant religion and culture.

  • میں لعنت بھیجو ایسی سوچ پرفلسطینی مظلوم اور پرامن رہنے والا ملک ہے جہاں نہ تو کہیں دہشتگردی ہو رہی ہے نہ کوئی ٹرسٹ ہو رہا ہے یہ تو صرف اپنی انصاف اور حق کے لیے لڑ رہے کہ آیا گناہ ہے اپناحق مانگنا گناہ ہے

  • لفافہ ہر جگہ چلتا ہے چاہے آپ لندن ہی کیوں نہ ہوں۔ ویسے جو تصاویر شیئر کی گئی ہیں ان میں یہ انسان یہودیوں کیساتھ انکی عبادت گاہوں میں کھڑا ہے۔ صرف نام مسلمانوں والا ہونے سے انسان مسلمان نہیں ہوتا۔ یزید، عبد الرحمٰن ابن ملجم، شمر و عبید اللہ ابن زیاد کی مثالیں دنیا کے سامنے ہیں۔۔ انہوں نے ہزاروں اصحاب و متقین کو قتل کیا

  • یہ وہ لوگ ہیں جنکو یہودی بچپن سے ٹرین کرتے ہیں اور پھر انکو طاقت دلوا کر مسلمانوں کے لیڈر بنواتے ہیں پھر مسلمان سمجھتے ہیں کہ یہ انکے نمائندے ہیں لیکن جب وقت آتا ہے تو یہ اپنے حقیقی لوگوں کا ساتھ دیتے ہیں جیسا کہ اس نے اسرائیل کا ساتھ دیا… کچھ دنوں میں اگر اس کے بیان کا ردعمل زیادہ آیا تو یہ پھر ایک بیان دے گا کہ میرا بیان غلط طریقے سے پہنچایا گیا ہے اور ہم سب کہیں گے ہمارا لیڈر ٹھیک کہہ رہا ہے.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >