چین نےدنیا کی سات بڑی طاقتوں کے گروپ جی سیون کو ‘چھوٹا’ قرار دے دیا

چین نےدنیا کی سات بڑی طاقتوں کے گروپ جی سیون کو 'چھوٹا' قرار دے دیا

چین نے دنیا کی 7 بڑی معاشی طاقتوں پر مشتمل گروپ” جی 7″ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ اب وہ دن نہیں ہیں جب جی 7 جیسے چھوٹے گروپس دنیا کی قسمت سے متعلق فیصلہ کرتے تھے۔

چین کی جانب سے یہ تنقید اس وقت سامنے آئی جب جی 7 نے چینی ون بیلٹ ون روڈ منصوبے کے مقابلے میں اپنا منصوبہ متعارف کروانے کا اعلان کیا ہے۔

جس اجلاس میں یہ فیصلہ ہوا چین نے اس اجلاس اور اس میں ہونے والے فیصلوں کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ون بیلٹ ون روڈ کے متبادل منصوبہ متعارف کروانا ناصرف ناممکن ہوگا بلکہ دنیا پر اس چھوٹے گروپ کی حکمرانی اب مزید نہیں چلے گی۔

چینی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں مزید کہا گیا کہ اب دنیا پر سات ملکوں پر مشتمل اس چھوٹے گروپ کی حکمرانی نہیں چلے گی بلکہ دنیا اب اقوام متحدہ کے وضع کردہ اصولوں پر مبنی عالمی نظام کے مطابق ہی چل سکتی ہے اور یہی اصل بین الاقوامی آرڈر ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ ملکوں کے درمیان امیری غریبی، کمزور مضبوط، بڑے یا چھوٹے کی کوئی تفریق نہیں ہوتی تمام ممالک برابر ہیں اسی لیے دنیا کے معاملات مٹھی بھر ممالک نہیں بلکہ تمام ممالک مل کر چلائیں گے۔

واضح رہے کہ جی 7 کا سربراہی اجلاس لندن میں منعقد ہوا تھا جس میں چین کے ون بیلٹ ون روڈ کے متبادل منصوبہ متعارف کروانے پر اتفاق کیا گیا تھا۔

  • مقابل کی بجائے اگر حمایت میں لاتے توپتہ چلتا کہ دنیا اور دنیا والوں کی بھلائی چاہتے ہیں مگر مقابل لا کر انہوں نے بتایا کہ یہ کتنے چھوٹے اور متعصب ہیں

  • چین کا یہ دعویٰ درست ثابت ہونے کے قوی شواہد موجود ہیں۔۔ چین کا اقوام عالم سے برابری کا برتاؤ اسے جی سیون کے مقابلے میں بلند مقام پر لا کھڑا کرتا ہے ۔۔ اگر چین اپنی انہی پالیسیوں پر قائم رہا تو دنیا اس صدی کے پہلے نصف میں ہی ایک مختلف رنگ میں رنگی جائے گی
    ۔ استحصال کو ختم یا کمزور ہونا
    اور دنیا کو استحصالی قوتوں سے آزادی ملنی چاہیے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >