کینیڈا میں ٹرک تلے کچلے گئے خاندان کے قتل کے مقدمے میں دہشتگردی کی دفعات بھی شامل کر دی گئیں

کینیڈا کے صوبے اونٹاریو میں پاکستانی خاندان کے 4 افراد کے قتل کے مقدمے میں دہشت گردی کی دفعات شامل کردی گئی ہیں۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق کینیڈا کے صوبے اونٹارویو کے شہر لندن کی عدالت میں ملزم نیتھینئل ولٹمین کی جیل سے ویڈیو لنک کے ذریعے پیشی ہوئی۔

مقامی عدالت کی جانب سے 4 افراد کے قتل کے مقدمے میں دہشت گردی کی دفعات کا اضافہ کردیا گیا، اس سے قبل ملزم کے خلاف صرف قتل اور اقدام قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج تھا۔

پولیس کی جانب سے کہا گیا کہ اقدام قتل بھی دہشت گردی کی سرگرمی ہے۔

یاد رہے کہ 6 جون کو کینیڈا کے شہر لندن اونٹاریو میں دہشت گردی کے واقعے میں ایک خاندان کے چار افراد 46 سالہ پاکستانی نژاد کینیڈین فزیوتھراپسٹ سلمان افضل، اُن کی 74 سالہ والدہ، 44 سالہ اہلیہ مدیحہ سلمان، بیٹی 15 سالہ یمنیٰ سلمان کو ٹرک کے نیچے کچل ڈالا تھا۔

کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے اس حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے دہشت گردی قرار دیا تھا۔ 20 سالہ ملزم نیتھینئل ویلٹمین پر قتل کے چار اور اقدامِ قتل کا ایک الزام عائد کیا گیا تھا۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>