امریکا نے 5 چینی کمپنیوں کو سیکورٹی رسک قرار دے دیا،پابندی کی تیاری

امریکا کی فیڈرل کمیونیکیشن کمیشن ( ایف سی سی) نے مواصلاتی اور نگرانی کے آلات بنانے والی 5 چینی کمپنیوں کو سیکورٹی رسک قرار دیتے ہوئے پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور جلد ہی امریکا کی جانب سے ان کمپنیوں کی مصنوعات پر پابندی عائد کردی جائے گی۔

امریکی ریگولیٹرز جن کمپنیوں پر پابندی کے خواہش مند ہیں ان میں ہواوے ٹیکنالوجیز، ہینگ ژو، ہک ویژن ڈیجیٹل ٹیکنالوجی ، زیڈ ٹی ای اور ڈاوا ٹیکنالوجی شامل ہیں جن کے نگرانی کے کیمرے بڑے پیمانے پر امریکی اسکولوں اور سرکاری دفاتر میں استعمال کیے جا رہے ہیں۔

تاہم اب ایف سی سی نے انہیں سیکورٹی خطرہ قرار دے دیا ہے۔ فیڈرل کمیونیکیشن کمیشن کا ان کمپنیوں پر پابندی کی تجویز میں کہنا ہے کہ ان آلات کو دی گئی آتھرائزیشن ختم کرنے کی وجہ سے ان اسکولوں اور دیگر صارفین کو اپنے کیمروں کے نظام کو تبدیل کرنا پڑ سکتا ہے۔

یاد رہے کہ ایف سی سی نے ابھی تک ان آلات کوہٹانے کے لیے کوئی حتمی تاریخ نہیں دی۔ حالانکہ مذکورہ کمپنیاں ان الزامات کی بھرپور تردید کر چکی ہیں۔ پھر بھی ایف سی سی، کانگریس اور وائٹ ہاؤس سائبر جاسوسی کے الزامات پر امریکی نیٹ ورکس میں ہواوے اور ZTE کے آلات استعمال نہ کرنے کو یقینی بنا چکے ہیں۔

2018 میں کانگریس نے وفاقی ایجنسیوں کو 5 چینی کمپنیوں سے آلات کی خریداری نہ کرنے کا ووٹ دیا تھا اور اب ایف سی سی بھی اسی بات کا دباؤ ڈال رہا ہے، ایف سی سی نے سیکیورٹی خطرات سمجھی جانے والے ان کمپنیوں کی گزشتہ سال ہی فہرست مرتب کر لی تھی۔

  • That z called the development, big tycon type of countries are afraid of China’s prevelance,
    There z no any security risk, actually they want to curtail the china selling products, but now it never be Unite States of Assholes..


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >