برطانوی رکن پارلیمنٹ پر 14 سالہ لڑکے کیساتھ جنسی زیادتی پر فرد جرم عائد

لندن: برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کی جماعت سے تعلق رکھنے والے رکن پارلیمنٹ عمران احمد خان پر 14 سالہ لڑکے کیساتھ جنسی زیادتی کی فرد جرم عائد کردی گئی۔

میڈیارپورٹس کے مطابق پراسیکیوشن سروس نے ایک بیان میں کہا کہ شمالی انگلینڈ سے منتخب رکن پارلیمنٹ عمران احمد خان پر 2008 کے واقعہ میں جنسی زیادتی کا الزام عائد کیا گیا ہے ، جس کا فیصلہ اسٹیفورڈ شائر پولیس کی جانب سے پیش شواہد کا جائزہ لینے کے بعد کیا گیا۔

برطانوی رکن پارلیمنٹ نے 13 سال پرانے واقعہ سے متعلق اپنے اوپر لگائے گئے الزامات کو سختی سے رد کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا کہ جو کام میں نے نہیں کیا، اس کے لیے الزام عائد کیا جانا انتہائی تکلیف دہ ہے ، میں بے قصور ہوں۔

برطانوی رکن پارلیمنٹ نے صحت جرم انکار کرتے ہوئے کہا کہ یہ الزام میرے اور میرے اہل خانہ کے لیے پریشان کن ہے۔یہ معاملہ شدید پریشان کن ہے اور میں یقیناً اسے انتہائی سنجیدگی سے لے رہا ہوں

عدالت نے عمران احمد خان کی غیر مشروط ضمانت بھی منظور کرلی۔ مقدمے کی آئندہ سماعت 14 جولائی کو ہوگی۔

دوسری جانب بورس جانسن کی کنزرویٹو پارٹی کا بھی ردعمل سامنے آگیا ہے۔ پارٹی ترجمان کا کہنا ہے کہ مقدمہ زیر سماعت ہے اس لیے کسی قسم کا تبصرہ کرنا مناسب نہیں تاہم رکن اسمبلی کی بطور وہپ حیثیت معطل کردی گئی ہے۔

واضح رہے کہ 47 سالہ عمران احمد خان نے شمالی برطانیہ کے ویک فیلڈ حلقے سے 2019 کے انتخابات میں اپوزیشن جماعت لیبر پارٹی کے رکن کو شکست دیکر فتح حاصل کی تھی۔

    • ڈیزلیوں نے صرف ‘عمران’ نام کی وجہ سے ہی اس پہ بہت بکواس کرنی تھی لیکن چونکہ انکا اپنا ‘پورن سٹار’ مفتی اے آر پکڑا گیا ہے اسلیے خاموش ہیں۔

  • ڈیزلیوں نے صرف ‘عمران’ نام کی وجہ سے ہی اس پہ بہت بکواس کرنی تھی لیکن چونکہ انکا اپنا ‘پورن سٹار’ مفتی اے آر پکڑا گیا ہے اسلیے خاموش ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >