مصر، فحاشی پھیلانے سمیت دیگر الزامات کی بنیاد پر 5 ٹک ٹاک اسٹار کو قید کی سزا

مصر، فحاشی پھیلانے سمیت دیگر الزامات کی بنیاد پر 5 ٹک ٹاک اسٹار کو قید کی سزا

مصر کی عدالت نے فوجداری مقدمے میں دو معروف خاتون ٹک ٹاکرز حنین حسام اور مواضہ العظام سمیت مجموعی طور پر 5 ٹک ٹاکرز کو ملک میں فحاشی پھیلانے اور انسانی اسمگلنگ کے الزام میں قید اور جرمانے کی سزائیں سنا دیں۔

تفصیلات کے مطابق قاہرہ کی عدالت نے نوجوان ٹک ٹاکر حنین حسام اور مواضہ العظام سمیت دیگر تین خواتین کو قید اور جرمانے کی سزا سنائی۔ عدالت نے حنین حسام کو 10 سال جب کہ مواضہ العظام کو دیگر تین خواتین کے ہمراہ 6 سال قید کی سزا سنائی، تمام ملزمان کو 2 لاکھ مصری پاؤنڈ جرمانے کی سزا بھی دی گئی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق تمام ٹک ٹاکرز کو ابتدائی طور پر گزشتہ سال جولائی میں گرفتاری کے بعد جیل بھیج دیا گیا تھا اور ان کے خلاف ملک میں فحاشی پھیلانے، لڑکیوں کو آن لائن جنسی لذت فراہم کرنے اور انسانی اسمگلنگ جیسے الزامات کے تحت قانونی کارروائی شروع کی گئی تھی۔

کیس کے ٹرائل کے دوران حنین حسام کو جیل سے آزاد کیا گیا تھا اور مواضہ العظام کی بھی سزا ختم کردی گئی تھی مگر بعد ازاں پھر معواضہ العظام کو نظر بند کردیا گیا۔ مصر کے قانونی مبصرین کا خیال تھا کہ ٹک ٹاکرز کو تنبیہ اور جرمانے کی ادائیگی کے بعد آزاد کردیا جائے گا، تاہم عدالت نے فیصلے میں ٹک ٹاک اسٹارز کو جیل بھیج دیا۔

مصری میڈیا رپورٹس میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ عدالتی فیصلے کے بعد مذکورہ لوگوں کو سزا کاٹنے کے لیے جیل بھیج دیا گیا اور انہیں جرمانے کی ادائیگی کا حکم بھی دیا گیا، تاہم تمام ملزمان عدالتی فیصلے کے خلاف اپیل کر سکتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >