روسی حکام کی صحافیوں کے خلاف کارروائیوں پر یورپی یونین کا اظہارِ مذمت

روسی حکام کی صحافیوں کے خلاف کارروائیوں پر یورپی یونین کا اظہارِ مذمت

یورپی یونین نے روسی حکام کی جانب سے آزاد میڈیا اداروں، صحافیوں اور سول سوسائٹی پر کریک ڈاؤن کے اقدام کی مذمت کی ہے۔

اس حوالے سے یورپین خارجہ امور کے ترجمان کی جانب سے جمعرات کی شب اعلامیہ بھی جاری کیا گیا۔ جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق روسی حکام نے ملک میں موجود آزاد میڈیا کے اداروں، صحافیوں اور سول سوسائٹی کی تنظیموں کے خلاف کریک ڈاؤن کا اعلان کیا ہے جس کی یورپی یونین مذمت کرتے ہوئے ان کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا ہے۔

یورپی یونین کے خارجہ امور کے سربراہ جوسیپ بوریل کی ترجمان نبیلہ ماثرعلی کا کہنا تھا،”یورپی یونین روسی سول سوسائٹی، انسانی حقوق کے محافظوں اور آزاد صحافیوں کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہے اور ان کے اہم کام میں مسلسل تعاون کرتی رہے گی۔”

یورپی یونین نے روس کے مشہور تھنک ٹینک انسٹی ٹیوٹ آف لا اینڈ پبلک پالیسی(آئی ایل پی پی) کوغیر قانونی اور متعدد صحافیوں کو غیر ملکی ایجنٹ نیز پروجیکٹ میڈیا نامی ادارے کو ناپسندیدہ تنظیم قرار دینے کے فیصلے کی مذمت کی۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ روسی حکام کی جانب سے الزامات اور دباؤ کی وجہ سے انسانی حقوق اور بنیادی آزادیوں کیلئے کام کرنے والے وکلاء اور صحافیوں کی ایک اور تنظیم ‘کوماندا 29’ بھی اپنا کام بند کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔

یورپین یونین نے روسی حکام کی جانب سے کئے جانے والے ان تمام اقدامات کی مذمت کی ہے اور ان اقدامات کو اظہار رائے اور تنظیم سازی کی آزادی کے لیے روس کی بین الاقوامی ذمہ داریوں اور انسانی حقوق کے وعدوں کے خلاف قرار دیا۔

یورپی یونین نے روسی حکام سے ان تمام اقدامات کو واپس لینے اور آزاد میڈیا اور سول سوسائٹی کو آزادانہ کام کرنے دینے کا مطالبہ کیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >