2015 میں بنائی گئی ایک پاکستانی شہری کی میم 84 لاکھ روپے میں نیلام

2015 میں بنائی گئی ایک پاکستانی شہری کی میم 84 لاکھ روپے میں نیلام

2015 میں جب میمز بنانے کا ٹرینڈ اتنا عام نہیں تھا تب گوجرانوالہ کے رہائشی آصف رضا رانا نے اپنے دوست سے دوستی ختم ہونے سے متعلق میم بنائی جس میں بڑنے رنگین فونٹ کے ساتھ لکھا کہ اس نے مدثر کے ساتھ دوستی ختم کر لی ہے اور اب سے سلمان اس کا بہترین دوست ہو گا۔

اس میم کو بنانے والے آصف رضا رانا نے بتایا کہ انہوں نے اپنے ایک دوست مدثر کے ساتھ دوستی ختم ہونے پر عالمی یوم دوستی کی مناسبت سے یہ میم 30 جولائی 2015 کو فیس بک پر شیئر کی تھی جو کہ بعد ازاں پوری دنیا میں وائرل ہو گئی۔ انہوں نے اس میم میں اپنے دوست مدثر کی تصویر پر کراس لگا کر اور سلمان کے ساتھ ہاتھ ملا کر تصویر لگائی اور اپنے پیغام کو صحیح معنوں میں سمجھانے کی کوشش کی۔

2015 میں بنائی گئی ایک پاکستانی شہری کی میم 84 لاکھ روپے میں نیلام

اس میم کے حوالے سے بات کرتے ہوئے آصف نے بتایا کہ ان کا مدثر کے ساتھ جھگڑا ہو گیا تھا تو انہوں نے اس وقت اپنے فیس بک پر 200 کے قریب دوستوں کو دکھانے کے لیے میم بنائی تھی تاکہ سب کو پتا چل جائے کہ اب سلمان میرا دوست ہے۔ یہ میم پاکستان سیمت دنیا بھر میں وائرل ہو گئی تھی اور اس میم کو ترمیم کے ساتھ دنیا بھر میں استعمال کیا گیا تھا حتیٰ کے ڈزنی، اور امریکی ڈیموکریٹس اور ری پبلکنز نے بھی اسے اپنی اپنی ترامیم کے ساتھ استعمال کیا۔

آصف نے بتایا کہ میم بنانے کے دو تین ماہ بعد مدثر سے صلح ہو گئی اور دوستی بحال ہو گئی تو انہوں نے ایک اور میم بنائی تھی جس میں کہا تھا کہ مدثر کے ساتھ دوستی بحال ہو گئی اب سلمان اور مدثر دونوں میرے دوست ہیں۔ اس کے بعد ان کی زندگی میں یہ تبدیلی آئی کہ فیس بک پر اسی سال دوست پانچ ہزار سے زائد ہو گئے اور پھر مقامی بیوٹی پارلر کا کمرشل بھی مل گیا۔

اب اس میم کو ہانگ کانگ کی ایک کمپنی نے ڈیجیٹل کرنسی ایتھیریم کے 20 کوائن میں خریدا ہے جو کہ پاکستانی روپے میں تقریبا 84 لاکھ روپے بنتے ہیں۔ آصف نے بتایا کہ وہ اس رقم سے اپنا گھر خریدیں گے اور گاڑی کا بھی ارادہ ہے تاہم ابھی رقم پراسس ہو کر ان تک پہنچنے میں وقت لگے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >