طالبان کو کابل میں سی آئی اے مراکز سے کیا کچھ ملا؟

طالبان کو کابل میں سی آئی اے مراکز سے کیا کچھ ملا؟

افغان طالبان نے دعویٰ کیا ہے کہ کابل میں واقع سی آئی اے کے سینٹر ز پر کنٹرول سنبھال چکے ہیں۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق طالبان نے کابل سے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ طالبان نے کابل میں سی آئی اے مراکز کا کنٹرول حاصل کرلیا ہے، امریکی فوج نے افغانستان سے جانے سے قبل ان مراکز میں لاکھوں ڈالر مالیت کے سامان کو نذر آتش کرکے تباہ کردیا تھا۔

طالبان کا کہنا ہے کہ تباہ کی گئی اشیاء میں اہم دستاویزات، ہتھیار اور ٹینکس شامل ہیں، اس کے علاوہ سی آئی اے ایجنٹس کے زیر استعمال ہر چیز کو تباہ کردیا گیا ہے، ان سینٹرز میں طالبان کا مکمل طور پر قبضہ ہے تاہم سینٹرز کے اندر کچھ کمروں میں بارودی سرنگوں کا خطرہ ہے جس کے باعث ان کمروں کی تلاشی نہیں لی گئی ہے۔

طالبان کو کابل میں سی آئی اے مراکز سے کیا کچھ ملا؟

افغان طالبان نے افغان میڈیا کے نمائندوں کو پہلی بار سی آئی اے سینٹرز کا اندرونی دورہ بھی کروایا اور بریفنگ دی، طالبان کا کہنا تھا کہ ان مراکز میں امریکی فورسز اور انٹیلی جنس کے افسران تعینات تھے جو افغانستان کے اندرونی اور بیرونی سیکیورٹی معاملات پر نظر رکھتے تھے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>