افغانستان کے نئے وزیراعظم ملا محمد حسن اخوند کی زندگی پر ایک نظر

افغانستان کے نئے وزیراعظم ملا محمد حسن اخوند کی زندگی پر ایک نظر

افغانستان میں طالبان نے باضابطہ طور پر اپنی حکومت قائم کرلی ہے جس کے سربراہ ملا محمد حسن اخوند ہیں، افغانستان کے نئے وزیراعظم کون ہیں؟ ان کی زندگی پر ایک مختصر نظر ڈالتے ہیں۔

خبررساں ادارے نے ملا محمد حسن اخوند کی زندگی کے حوالے سے مرتب کی گئی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ افغان حکومت کے سربراہ طالبان کی رہبری شوریٰ کے سربراہ ہیں۔ طالبان کی بنیاد افغان صوبے قندھار میں رکھی گئی تھی اور محمد حسن اخوند کا تعلق بھی قندھار سے ہی ہے ان کی حیثیت طالبان کے بانیوں کی سی ہے۔

محمد حسن اخوند ایک کامیاب مذہبی اسکالر بھی ہیں، گزشتہ20 برس سے طالبان امیر ملا ہیبت اللہ کے ساتھ کام کررہے ہیں۔

محمد حسن اخوند افغانستان میں امریکی آمد سے قبل طالبان حکومت میں بطور وزیر خارجہ فرائض سرانجام دے رہے تھے، انہوں نے اگست 1999 میں پاکستان کا دورہ بھی کیا تھا اور اس وقت کے پاکستانی وزیراعظم میاں نواز شریف سے ملاقات بھی کی تھی۔

افغانستان کے نئے وزیراعظم ملا محمد حسن اخوند ملا محمد ربانی کے دور حکومت میں افغانستان کے نائب صدر کی حیثیت سے فرائض سرانجام بھی دے چکے ہیں۔

واضح رہے کہ طالبان نے افغانستان کی نئی حکومت کے سربراہ اور کابینہ اراکین کا باضابطہ طور پر اعلان کردیا ہے جس کے مطابق ملا محمد حسن اخوند ریاست کے سرپرست یعنی عبوری وزیراعظم ہوں گے جبکہ ملا عبدالغنی برادر وزیراعظم کے نائب اور معاون جبکہ طالبان کے بانی ملا محمد عمر کے صاحبزادے اور طالبان ملٹری آپریشنز کے سربراہ ملا محمد یعقوب مجاہد کو وزارت دفاع کا سربراہ بنایا گیا ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>