پنجاب میں ہسپتالوں کی اوپی ڈیز بند، ٹیلی میڈیسن سروس شروع

کورونا وائرس کے باعث پنجاب بھر کے تمام ہسپتالوں میں او پی ڈی سروس بند کردی گئی ہے او ر ٹیلی میڈیسن سروس کا آغاز کردیا گیا ہے۔

مریض اور ڈاکٹر کے درمیان رابطے کو بحال رکھنے کیلئے ٹیلی میڈیسن کا سہارا لیا جارہا ہے،جس میں مریض فون یا ویڈیو کال کے ذریعے ڈاکٹروں سے اپنی بیماری سے متعلق رائے لے سکتے ہیں اور میڈیسن بھی لکھوا سکتے ہیں، صوبے بھر میں 7 ٹیلی میڈیسن سینٹرز کام کررہے ہیں جس میں تین صرف لاہور شہر جبکہ 4 دیگر شہروں میں قائم ہیں، ان سینٹرز میں 3 شفٹوں میں ڈاکٹرز 24گھنٹوں کیلئے دستیاب ہوتے ہیں۔

منصوبے کے چیئرمین ڈاکٹر ہمایوں تیمور کہتے ہیں کہ ڈاکٹروں کو ایک روز میں 1700 سے زائد فون کالز موصول ہوتی ہیں، فون کرنے والوں کا تعلق نہ صرف پاکستان کے تمام صوبوں بلکہ امریکہ اور برطانیہ سے بھی فون کالز کا سلسلہ جاری ہے، ہمارے پاس بھارت سے بھی کال آئی جسے ٹیلی میڈیسن کے ذریعے سہولت فراہم کی گئی، ٹیلی میڈیسن سینٹر میں پنجابی، سندھی پشتو اور دیگر علاقائی زبانیں بولنے والےڈاکٹرز موجود ہیں ۔

ٹیلی میڈیسن میں کام کرنے والی ایک ڈاکٹر فروا رباب کا کہنا ہے کہ مریض کا درجہ حرارت یا بلڈ پریشر چیک کرنا آسان نہیں ہوتا، اس کیلئے ہمیں مریض کی مدد کی ضرورت ہوتی ہے، گھر میں موجود تھرمامیٹر موجود ہوتا ہے جبکہ بلڈ پریشر کیلئے قریبی میڈیکل سٹور یا فارمیسی کی مدد لی جاسکتی ہے۔

ٹیلی میڈیسن منصوبے میں اب تک 5 ہزار 500 ڈاکٹروں کا اندراج کیا جاچکا ہے جبکہ ڈیڑھ سو فون لائنز فعال ہیں جس کے ذریعے شہریوں کو گھر بیٹھے ڈاکٹروں کی رہنمائی کی سہولت فراہم کی جارہی ہے۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More