میڈ اِن پاکستان وینٹی لیٹروں کی ایکسپورٹ شروع ہونے والی ہے؟

میڈ اِن پاکستان وینٹی لیٹروں کی ایکسپورٹ شروع ہونے والی ہے؟

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا کہ وہ پُرامید ہیں کہ رواں سال کے اختتام تک پاکستان میں مقامی سطح پر اپنی ٹیکنالوجی کی مدد سے بننے والے وینٹی لیٹروں کی برآمد شروع ہو جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ چوتھی کمپنی کو بھی وینٹی لیٹر بنانے کا لائسنس مل گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فواد چودھری نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر کہا کہ الحمدللہ وزارت سائنس میں کورونا کے دوران ہونے والے کام کے نتیجے میں چوتھی کمپنی کو بھی وینٹی لیٹر بنانے کا لائسنس مل گیا ، اس سال امید ہے ہم وینٹس ایکسپورٹ کرنا شروع کر دیں گے، فیصل آباد میں ہیلتھ سٹی بنایا تھا ستمبر میں آٹو ڈسپوزیبل سرنج بنانا شروع کریں گے۔

سی ای او ڈریپ (ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان) ڈاکٹر عاصم نے کہا تھا کہ میڈ ان پاکستان وینٹی لیٹرز کے نام پاک وینٹ ون اور آئی لیو ہیں، آئی لیو وینٹی لیٹر پاکستان اٹامک انرجی کمیشن نے تیار کیا ہے۔

جب کہ گزشتہ روز ڈریپ نے ملک میں لوکل وینٹی لیٹرز کی پروڈکشن کی اجازت دی تھی اور ڈریپ رجسٹریشن بورڈ سے 2 کمپنیز کو وینٹی لیٹر سازی کے لائسنسز جاری کئے گئے تھے۔

وینٹی لیٹر پروڈکشن لائسنس ڈریپ میڈیکل ڈیوائسز رولز 2017 کے تحت دیئے گئے ہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>