کرونا وائرس: کینیڈا میں سماجی فاصلہ برقرار نہ رکھنے پر جرمانہ ہوگا

کینیڈا نے کرونا کے متعلق قوانین سخت کر دئے، "سماجی فاصلہ” کی ھدایت پر عمل نا کرنے کی صورت میں جرمانہ ہوگا

جرمانہ ہر طرح کی انفرادی اور کمپنیز کی سطح پر ہوگا

تفصلات کے مطابق کینیڈا میں وفاقی صوبائی اور شہری حکومتیں کرونا وائرس کے خلاف لڑنے کے لئے عوامی میل جول کم کرنے کے لئے قانون سازی کر رہی ہیں۔

نئے قانون کے تحت جو شخص یا کمپنی سماجی فاصلہ کے قانون کی خلاف ورزی کرے گا اسے حکومت کی طرف سے جرمانہ کیا جائے گا۔ یہ جرمانہ انفرادی سطح پر 1 ہزار ڈالر جبکہ کمپنی کی سطح پر قریب 5 لاکھ ڈالر جرمانہ ہوگا۔

کینیڈا میں حکام کا کہنا ہے کہ لوگوں کی ایک کثیر تعداد تو اس اصول کی پیروی کر رہی ہے لیکن اب بھی چند لوگ ہیں جو باہمی میل جول میں احتیاط نہیں برت رہے۔

کینیڈا کے علاقہ اؤنٹوریو میں جہاں ہنگامی قانون سازی کے تحت چند پابندیاں لگائی گئی ہیں وہاں حکومت کی جانب سے 50 سے زائد افراد کا ایک جگہ جمع ہونا ممنوع قرار پایا ہے۔ اسکے علاوہ اس سارے علاقہ میں کسی بھی قسم کی کوئی تقریب منعقد کرنے پر بھی پابندی ہے۔

یاد رہے کہ کینیڈا کی خاتون اول میں بھی کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی جسکے بعد کینیڈا کے وزیر اعظم نے تمام حکومت امور گھر سے بیٹھ کر سر انجام دینے شروع کر دئے تھے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>