میوہسپتال میں ڈاکٹروں کی سنگدلی، کرونا کا مریض دم توڑگیا

لاہور میں میوہسپتال میں آج کرونا وائرس کےشکار بزرگ مریض کی موت واقع ہوگئی جس کی وجہ ڈاکٹروں کی غفلت اور سنگدلی بتائی جارہی ہے۔حامد میر کا دعویٰ ہے مریض کو رسیوں سے باندھ ر ماردیا گیا۔ مریض تڑپتا رہا لیکن ڈاکٹرز نے ایک نہ سنی۔ اس موقع پر حامد میر نے ایک فوٹیج بھی شئیر کی جس میں مریض کو رسیوں سے باندھے دیکھا جاسکتا ہے جبکہ عینی شاہدین نے بھی تصدیق کی۔

حامد میر نے دعویٰ کیا کہ آج میو اسپتال لاہور کے کرونا وارڈ میں ایک مریض ڈاکٹروں کی سنگدلی کے باعث مارا گیا اسے رات کو ونٹی لیٹر کی ضرورت تھی مدد مانگی تو اسے رسیوں کے ساتھ بیڈ سے باندھ دیا گیا صبح وہ انتقال کر گیا ہمیں صرف ان سے پیار ہے جو مریضوں سے پیار کرتے ہیں جو مریضوں سے ظلم کریگا اس بے نقاب کرینگے

حامد میر نے ویڈیو شئیر کی جس میں ایک مریض کے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں۔

چینل 24 کے پروڈیوسر شکیل خان نے اپنے سامنے ہونیوالی تمام روداد سنادی۔ شکیل خان کے مطابق اسکے سامنے کل رات میو ہسپتال لاہور کے کرونا وارڈ میں ایک مریض محمد حنیف کو رسیوں سے باندھ دیا گیا اس ظلم کے بعد اسکی موت کی کہانی شکیل کی زبانی سنئیے مریضوں کا خیال رکھنے والے طبی عملے کو ہمارا سلام لیکن محمد حنیف کے قاتلوں کو بے نقاب کرنا ہمارا فرض ہے

میوہسپتال کے سی ای او پروفیسر اسد اسلم نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ مریض وارڈ سے بھاگنے کی کوشش کررہا تھا جس پر اسے رسیوں سے باندھنا پڑا

دوسری جانب پنجاب حکومت کے ترجمان کے مطابق انکوائری کا حکم دیدیا گیا ہے۔ ماہرین کا گروپ موت کی وجوہات کی انکوائری کرے گا۔ اگر کوئی ملوث پایا گیا تو سخت ایکشن لیا جائے گا۔

    Minister (2k + posts)

    بھائ یہ جھوٹ بول رہا ہے۔ جب تک رپورٹ پازیٹو نہ آئے یہ وارڈ میں داخل ہی نہیں کرتے۔ سیپریٹ روم دیتے ہیں۔ دوسرا ہر مریض بھاگ کے باہر جانے کی کوشش کرتا ہے۔

    (2 posts)

    Out of context .as patient with altered consciousness is very irritable and rest less ,so having Nasogastric tube,catheterization done,oxygen mask and IV lines ,hand are tied so patient don’t take them out .
    .not for any torture .Thats why it is important to verify and ask someone who knows why .

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More