میو ہسپتال میں کورونا کے مریض کی موت پر وزیراعظم عمران خان کا ردعمل

صحافیوں کو کورونا وائرس سے متعلق بریفنگ کے دوران وزیراعظم پاکستان سے میو ہسپتال میں ڈاکٹروں کی سنگ دلی کے باعث مریض کی ہلاکت سے متعلق سوال،

سینئر صحافی نسیم زہرہ نے سوال کرتے ہوئے دلخراش واقعے اور ڈاکٹروں کی سنگ دلی پر انکوائری کا مطالبہ کیا جس پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم ہر شکایت پر انکوائری کروانے کیلئے تیار ہیں لیکن ایک بات مجھے کہنی ہے مجھے اقتدار میں آئے ڈیڑھ سال ہوا ہے اس ملک پر 30 ، 30 سال حکومت کرنے والے لوگوں نے صحت کے نظام پر کوئی کام نہیں کیا،

اس ملک پر 30 سال حکومت کرنے والے لوگ خود تو اپنا چیک اپ بھی باہر سے کرواتے ہیں، ان کے خاندان اور رشتے داروں کا علاج بھی باہر سے ہوتا ہے تو ملک کا صحت کا نظام کیسے ٹھیک ہوگا، میں میری بہنیں سرکاری ہسپتالوں میں پیدا ہوئے ہیں اس ملک کے صحت کے شعبے کو برباد کردیا  30 ، 30 سال حکومت کرنے والوں نے۔

ٹیکس کے پیسے سے صاحب اقتدار افراد باہر جاکرعلاج کرواتے تھے، میں عوام کو یقین دہانی کرواتا ہوں انشااللہ جب ہم کورونا وائرس کے اس بحران سے نکلیں گے تو ہمارا صحت کا شعبہ بھی اسی بحران میں ٹھیک ہوگا۔ہماری توجہ بھی ہسپتالوں کی طرف ہےان حالات میں تو کوئی بھی باہر نہیں جاسکتا تو یہاں کے صحت کے نظام کو ہی بہتر کرنا ہوگا۔

یاد رہے کہ سوشل میڈیا پر میو ہسپتال میں کورونا وائرس کے ایک مریض کی تشویش ناک حالت میں ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں مریض شدید تکلیف کی حالت میں کراہ رہا تھا، عینی شاہدین کے مطابق مریض ڈاکٹروں کی سنگدلی کے باعث مارا گیا اسے رات کو ونٹی لیٹر کی ضرورت تھی مدد مانگی تو اسے رسیوں کے ساتھ بیڈ سے باندھ دیا گیا صبح وہ انتقال کر گیا۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More