پاکستان: کرونا سے شدید 200 متاثرین کاعلاج صحتیاب افراد کے پلازمہ سے ہوگا

کرونا سے شدید 200 متاثرین کاعلاج صحتیاب افراد کے پلازمہ سے ہوگا

پاکستان میں کرونا سے صحتیاب افراد کا پلازمہ دو سو شدید متاثرین کے علاج کیلئے استعمال کیا جائے گا.

ایک خبر کے مطابق سندھ اور پنجاب کی حکومتوں نے کرونا وائرس کے خلاف چینی طرز کی حکمتِ عملی اختیار کرنے کے فیصلہ کے بعد پائلٹ پروجیکٹ کی تیاری بھی مکمل کرلی ہے.

اس طریقے کے تحت وائرس کا شکار ہونے کے بعد صحتیاب ہونےوالے افراد کا بلڈ پلازمہ متاثرین میں منتقل کیا جائے گا. صحت یاب افراد کا بلڈ پلازما متاثرین میں منتقل کرنے سے بلڈ پلازما میں موجود متعلقہ اینٹی باڈیز، متاثرہ شخص میں وقتی طور پر اس وبا کیخلاف مدافعت پیدا کرتے ہیں.اس عمل کو پیسو امیونائزیشن یعنی غیر عامل امنیت کاری کہا جاتا ہے..یہ ویکسین کی تیاری تک وائرس سے بچاو کا عارضی طریقہ کار ہے.

اس عمل کیلئے صوبائی وزیرِ صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے بلڈ اسپیشلسٹ اور نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف بلڈ ڈزیز اینڈ بون میرو ٹرانس پلانٹیشن کے سربراہ، ڈاکٹر طاہر شمسی سے رابطہ کرکے تمام تفصیلات اکٹھا کرلی تھیں. اور اب بھی سندھ اور پنجاب کی حکومتیں مسلسل رابطے میں ہیں.

اس سے قبل چین اور امریکا نے کرونا سے صحتیاب ہونے والے افراد کا بلڈ پلازمہ کرونا کا شکار افراد کے علاج کیلئے استعمال کیا ہے.چین کے حوالےسے ایک خبر میں اسی طریقے کا علاج بتایا گیا تھا کہ بلڈ پلازما لگانے پر متاثرین صحتیاب ہوئے. امریکی ماہرین نے بھی کووڈ نائنٹین سےنمٹنے کےلیے یہی تجویز دی تھی۔

پاکستان میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد پندرہ سو بیالیس ہو گئی ہے جبکہ پانچ سو ستر متاثرین کے ساتھ پنجاب سب سے زیادہ متاثر صوبہ ہے.پاکستان میں ہلاکتوں کی تعداد پندرہ ہوگئی ہے.

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More