جماعت اسلامی کے ورکرز کا چرچ اور مندروں میں جراثیم کش سپرے،مذہبی رواداری کی مثال قائم

جماعت اسلامی کے ورکرز کا چرچ اور مندروں میں جراثیم کش سپرے،مذہبی روادار ی کی مثال قائم

پاکستان ایک اسلامی ریاست ہے جہاں اسلامی تعلیمات کے عین مطابق معاشرے میں رواداری اور امن قائم رکھنےکی کوششیں جاری رہتی ہے،

پاکستان میں اقلیتیں دنیا کے بہت سے ممالک خصوصا پڑوسی ملک کی نسبت نہایت محفو ظ ہیں اور امن و سکون سے اپنی زندگی بسر کررہے ہیں مسلمان شہریوں کی جانب سے اکثر و بیش تر ان کیلئے اظہار یکجہتی بھی کیا جاتا ہے اور حکومتی سطح پر بھی انہیں پاکستان کے برابر شہری کے حقوق فراہم کرنے کیلئے ہر ممکن کوشش جاری رہتی ہے۔


ایسی ہی ایک کوشش جماعت اسلامی کی فلاحی تنظیم الخدمت کی جانب سے سامنے آئی جن کے ورکرز کورونا وائرس کے خلاف  فلاحی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں ، مختلف عوامی مقامات کو کورونا وائرس سے محفوظ رکھنے کیلئے الخدمت فاؤنڈیشن کی جانب سے جراثیم کش سپرے کیا جارہا ہے،

مہم کے دوران چرچ اور مندروں میں بھی کورونا وائرس سے بچاؤ کا سپرے کرکے دنیا کو مذہبی روادار ی کا بہترین پیغام دیا گیا کہ اسلام ایک امن و سلامتی کا مذہب ہے اور پاکستان اس مذہب کی تعلیمات پر بنائی گئی ایک ریاست۔

اس اقدام کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد لوگوں کی جانب سے تعریفی پیغامات کا تانتا بندھ گیا، سندھ سے تعلق رکھنے والے ہندو سماجی کارکن کپل دیو نے اپنے پیغام میں لکھا کہ الخدمت کے چرچ اور مندروں میں بھی جراثیم کش سپرے کرنا ایک بہترین قدم ہے اور یہ مذہبی رواداری کی سب سے بڑی مثال ہے۔


ایک شخص نے لکھا یہ پاکستان کا اصل چہرہ ہے۔ ایک دوسرے صارف کی جانب سے جماعت اسلامی کے اس فعل کو سراہتے ہوئے لکھا گیا کہ جماعت اسلامی مذہب، فرقہ یا نسل کی بنیاد پر یقین نہیں رکھتی ، سیلیوٹ ہے ان کو۔

دنیا بھر میں جاری کورونا وائرس کے حالیہ بحران کے باعث تمام کاروبار زندگی تعطل کا شکار ہے، مساجد اور دیگر مذہبی اجتماعات پر پابندی عائد کی جاچکی ہے،

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More