چین نے عالمی ادارہ صحت سے کورونا کی معلومات چھپائیں،ریکارڈنگ میں انکشاف

چین نے عالمی ادارہ صحت سے کورونا کی معلومات چھپائیں،ریکارڈنگ میں انکشاف

چین اور ڈبلیو ایچ او (عالمی ادارہ صحت) کا مابین ہوئی گفتگو میں نیا انکشاف ہوا ہےکہ چین کورونا وائرس سے متعلق حقائق کو چھپاتا رہا۔

امریکی خبر ایجنسی نے دعویٰ کیا ہے کہ کورونا کے ابتدائی ایام میں ڈبلیو ایچ او کو معلومات اکٹھی کرنے میں جدوجہد کرنا پڑی۔

امریکی خبر ایجنسی نے ڈبلیو ایچ او اور چین کے مابین ہونے والی6 جنوری کی گفتگو کا حوالہ دیا کہ جب عالمی ادارہ صحت کے حکام نے شکایت کی کہ چین متعلقہ معلومات کا تبادلہ نہیں کر رہا تھا۔

چین میں عالمی ادارہ صحت کے گاؤڈین گلیہ نے کہا کہ چین ڈبلیو ایچ او کو صرف وہی معلومات فراہم کرتا ہے جو کچھ لمحے بعد چینی میڈیا نشر کر دیتا ہے۔

گاوڈین گلیہ نے کہا کہ ہماری قیادت اور عملے نے تنظیم کے قواعد و ضوابط کی تعمیل میں دن رات کام کیا ہے تاکہ تمام ممبر ممالک کے ساتھ یکساں طور پر معلومات شیئر کی جاسکے مگر چین کی جانب سے متعلقہ معلومات محدود سطح پر شیئر کی جاتی رہیں۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More