سعودی عرب میں کورونا سے جاں بحق ہونے والے پاکستانی ڈاکٹر ہیرو قرار

 

سعودی عرب میں مقیم پاکستانی کمیونٹی اور میڈیکل سٹاف کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں جاں کی بازی ہارنے والے پاکستانی ڈاکٹر کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔

سعودی عرب میں کورونا کے خلاف جنگ میں جاں بحق ہونے پہلے ڈاکٹرنعیم خالد چوہدری نے 2 روز قبل مکہ المکرمہ میں جان کی بازی ہاری، وہ مکہ کے مقامی ہسپتال حرا جنرل ہسپتال میں فرائض سرانجام دیتے تھے۔

46 سالہ ڈاکٹر نعیم پاکستان کے علاقےنارووال سے تعلق رکھتے تھے، وہ 2014 میں اپنی فیملی کے ہمراہ مکہ منتقل ہوئے تھے، ان کی فیملی میں بیوی اور تین بیٹیاں ہیں۔

ان کی اہلیہ بھی ہسپتال میں بطو ر ریڈیالوجسٹ فرائض سرانجام دیے رہی ہیں ، ان کا کہنا تھا کہ میرے شوہر اس وباء کے دوران مسلسل اپنی ذمہ داریاں نبھانے میں مصروف رہے ، انہیں 14 مئی سے کورونا وائرس کے ہلکی علامات ظاہر ہورہی تھیں۔

انہیں 14 مئی سے ہلکا بخار اور جسم میں درد محسوس ہورہا تھا، اور اس کے بعد ان میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی، ہم نے ان کا علاج شروع کیا اور وہ جون کے شروع ہونے سے پہلے تک بہتر ی کی طرف جارہے تھے، پھر اچانک ان کی حالت بگڑنا شروع ہوئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ میرا اور میری تینوں بیٹیوں کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے، مگر ہم اب بہتر ہیں، ہمارےجسم میں کورونا کی علامات بھی ختم ہوگئی ہیں، مگر ابھی تک ہمارا دوبارہ ٹیسٹ نہیں کیا گیا، سعودی عرب میں پاکستانی سفارت خانے نے ہم سے رابطہ کرکے ہر قسم کی مدد کی یقین دہانی کروائی ہے، جبکہ سعودی حکام نے مجھے پورے سیفٹی کٹ میں رہتے ہوئے اپنے شوہر کی آخری رسومات میں شرکت کی بھی اجازت دی ہے۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More