سمارٹ لاک ڈاؤن: اسلام آباد میں کرونا کیسز کی تعداد میں بتدریج کمی

ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کا کہنا ہے کہ سمارٹ لاک ڈاؤن کرنے سے کورونا وائرس کا گراف نیچے جارہا ہے۔

ڈپٹی کمشنر اسلام آباد محمد حمزہ شفقت نے ٹویٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہا کہ ہم نے ایس او پیز کی خلاف ورزی پر96 ہوٹلز سیل کیے، 14 لاکھ کے جرمانے عائد کیے، 422 دکانیں بند کروائیں، 17 ورکشاپس کو سیل کیاہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے اسلام آباد انتظامیہ نے 9 انڈسٹریل یونٹس اور 10 سب سیکٹرز بھی سیل کیے ہیں۔

ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ اس کا نتیجہ نیچے دیئے گئے گراف میں دیکھیں جو الحمداللہ نیچے جارہا ہے، روزانہ 600 کیسز سے تعداد کم ہوکر300 کیسز یومیہ پر آگئی ہے۔

واضح رہے کہ اسلام آباد انتظامیہ نے ایسے سیکٹرز اور علاقوں کو سیل کردیا تھا جنہیں کرونا کا ہاٹ سپاٹ سمجھاجاتا تھا۔ضلعی انتظامیہ نے وفاقی دارالحکومت میں غوری ٹاؤن، سیکٹر جی سکس ون ، جی سکس ٹو، جی ٹین 4 اور جی سیون 2 کو سیل کیا تھا۔

ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ ان علاقوں میں پچھلے کئی دنوں سے اوسطا 40 کیسز فی ایریا آرہے تھے اور ان علاقوں میں25 اموات رپورٹ ہوئی تھیں۔

ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقات نے یہ بھی کہا تھا کہ اسلام آباد میں ایک ہفتے کے اسمارٹ لاک ڈاؤن کے حوصلہ افزا نتائج آنا شروع ہو گئے ہیں، اور جی نائن سیکٹر میں نئے کیسز میں تقریباً 50 سے 60 فیصد کمی آئی ہے۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More