اسمارٹ لاک ڈاؤن کے باعث کروناکیسز میں کمی کے حکومتی دعوے میں کتنی حقیقت ہے؟

اسمارٹ لاک ڈاؤن کے باعث کورونا کیسز میں کمی کے حکومتی دعوے میں کتنی حقیقت ہے؟ جانیے حبیب اکرم سے

اسمارٹ لاک ڈاؤن کے باعث کورونا کیسز میں کمی کے حکومتی دعوے میں کتنی حقیقت ہے؟ جانیے حبیب اکرم سے

اسمارٹ لاک ڈاؤن کے باعث کورونا کیسز میں کمی کے حکومتی دعوے میں کتنی حقیقت ہے؟ جانیے حبیب اکرم سےمکمل پروگرام دیکھیے:http://video.dunyanews.tv/index.php/en/pv/Ikhtalafi%20Note/20775/ep-23980/All/2020-07-12

Posted by Ikhtalafi Note on Sunday, July 12, 2020

حبیب اکرم نے نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول کے گزشتہ ایک ماہ کے ڈیٹا کو سامنے رکھتے ہوئے کہا کہ گزشتہ روز جو کرونا کے کیسز سامنے آئے وہ 16 فیصد تھے، اگر ہم 30 جون تک کا ڈیٹا سامنے رکھیں تو کرونا سے متاثرہ مریض 19 فیصد تھے، جولائی کے پہلے 11 دنوں کے نمبر دیکھیں تو یہ شرح 14 فیصد بنتی ہے۔

حبیب اکرم نے کہا کہ اس شرح کو کم کرنے میں این سی او سی اور صوبائی حکومتوں نے اہم کردار ادا کیا، ماسک پہننے اور پہنوانے کی وزیراعظم کی کمپین نے بھی اہم کردار ادا کیا، ریاست کے سب ادارے انوالو ہوئے تو کرونا کے کیسز کم ہوگئے۔

حبیب اکرم نے کرونا کے کیسز کی کمی کی وجہ یہ بتائی کہ اپوزیشن حکومت کو کام کرنے نہیں دے رہی تھی لیکن اس پر کام کرنے دیا، حبیب اکرم کے مطابق جس وقت کرونا نہیں تھا، مجھےاپوزیشن کے سینئر بندے نے کہا کہ ہم اس حکومت کو کام کرنے نہیں دیں گے اور اس کے بعد اپوزیشن نے واقعی حکومت کو کام نہ کرنے دیا، جس کے بعد اس شخص پر نیب کا مقدمہ بھی بنا۔

حبیب اکرم کے مطابق کرونا کا سبق یہ ہے کہ حکومت کو اپوزیشن سے بناکر رکھنی چاہئے، زبانیں بند رکھنا ہوں گی اور نیب کا کام نیب کو ہی کرنے دینا ہوگا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >