ڈاکٹر عطاء الرحمن نے پاکستان میں کرونا وائرس کی ویکسین کے حوالے سے خوشخبری سنادی

ڈاکٹر عطاء الرحمن نے پاکستان میں کرونا وائرس کی ویکسین کے حوالے سے خوشخبری سنادی

کرونا ٹاسک فورس کے سربراہ ڈاکٹر عطاء الرحمان کا نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے پاکستان میں کرونا وائرس کی ویکسین کے حوالے سے خوش خبری سناتے ہوئے کہنا تھا کہ میں آپ کو یہاں کرونا وائرس کی ویکسین کے حوالے سے بریکنگ نیوز دینا چاہتا ہوں کہ پاکستان میں کرونا وائرس کی ویکسین کے کلینیکل ٹرائل کے لیے چائنا کی ایک کمپنی کے ساتھ معاہدے پر دستخط ہوگئے ہیں۔

ڈاکٹر عطا الرحمان کا بتانا تھا کہ ہم نے اس حوالے سے ڈریپ کو ایپلیکیشن بھیج دی ہے، جیسے ہی ڈریپ ہماری سفارشات کو منظور کرے گا، مذکورہ ویکسین کا کلینیکل ٹرائل فوری طور پر بڑے پیمانے پر شروع کر دیا جائے گا، کراچی یونیورسٹی کے بائیو ٹیکنیکل اینڈ انٹرنیشنل کیمیکلز سنٹر کے ساتھ چائنا کی کمپنی کا معاہدہ ہوا ہے۔

پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کرونا ٹاسک فورس کے سربراہ کا بتانا تھا کہ جیسے ہی پاکستان میں کرونا وائرس کی ویکسین کا کلینیکل ٹرائل مکمل ہوگا، فوری طور پر کرونا وائرس کی ویکسین مارکیٹ میں کم سے کم قیمت پر فروخت کے لئے پیش کر دی جائے گی، اس کے علاوہ ہمارا چائنہ کی کمپنی کے ساتھ یہ معاہدہ بھی ہوا ہے کہ کرونا وائرس کی ویکسین کی کم سے کم قیمت  رکھی جائے گی۔

ڈاکٹر عطاء الرحمن کا ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہنا تھا کہ دنیا میں اس وقت سو سے زائد کمپنیاں کرونا وائرس کی ویکسین دریافت کرنے میں لگی ہوئی ہیں لیکن ان میں سے صرف 15 سے 16  کمپنیاں ہی ویکسین کو لے کر مارکیٹ میں آئیں گی اور ان ممالک میں پاکستان کا نام بھی شامل ہوگا جو چائنا کے ساتھ مل کر کرونا کی ویکسین تیار کر رہا ہے۔

چائنہ میں کرونا وائرس کی ویکسین کے کلینیکل ٹرائلز کے حوالے سے بتاتے ہوئے ڈاکٹر عطاء الرحمان کا کہنا تھا کہ چائنا میں اس ویکسین کے کلینیکل ٹرائلز کے فیز ون اور فیز ٹو ہوچکے ہیں اب چائنا اپنے آخری مرحلے یعنی فیز تھری میں داخل ہوچکا ہے، چائنہ میں اس ویکسین کے فیز ون اور ٹو کے بہت اچھے نتائج سامنے آئے ہیں، تاہم پاکستان میں اس ویکسین کا فیز ون اور فیز تھری ہوگا جس کے بعد اس ویکسین کو حتمی قرار دے دیا جائے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >