فردوس عاشق اعوان نے کرونا کی مریضہ ہوتے ہوئے کیوں شناخت چھپائے رکھی؟

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کرونا کی مریضہ ہونے کے باوجود شناخت چھپانے کا اعتراف کرلیا۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے انکشاف کیا کہ انہیں بھی کرونا ہوا تھا تاہم انہوں نے اپنی شناخت چھپائی۔شناخت چھپانے کا مقصد یہ تھا کہ میڈیا کو پتا نہ چل سکے۔ میں خبربا آسانی چھپائی،اس کا مطلب ہمارے سسٹم میں گیپ ہے۔

فردوس عاشق نے یہ بھی بتایا کہ انھیں ٹیسٹ کے نتائج اور رپورٹ ملی، صرف انہیں یا لیب کو پتہ تھا کہ وہ کرونا وائرس کا شکار ہوگئی ہیں۔

ڈاکٹر فردوس کا کہنا تھا کہ انٹرنیٹ پر وائرل ہوا تھا کہ ثناء مکی کے قہوے سے کرونا کا مریض صحتیاب ہوجاتا ہے، میں ڈاکٹر تھی لیکن مجھے میری فیملی نے زبردستی قہوہ پلایا دیا ، یہ سب گھٹیا اور فضول باتیں ہیں، اس قہوے نے مجھے جتنا نقصان پہنچایا، شاید کرونا نے اتنا نقصان نہیں پہنچایا۔میرا امیونٹی سسٹم اس قہوے سے بہت متاثر ہوا۔

فردوس عاشق نے یہ تصدیق کی کہ اب وہ مکمل طور پر کرونا سے صحت یاب ہوچکی ہیں۔

  • Ppp k khotay hamesha khotay rehty hai chahy jaha b chly Jaye
    a doctor with the donkey brain… why she hide this did she achieved something??? She just put many life in danger like Maria b…she should be kicked from pti I don’t think so pti need such kind of people in party


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >