پاکستان نے 80 فیصد کرونا وبا پر قابو پالیا ، امریکی جریدے کا اعتراف

امریکی جریدے وال سٹریٹ جنرل نے پاکستان کی کرونا کے خلاف کوششوں کا اعتراف کیا ہے اور کہا ہے کہ پاکستان میں جہاں دو ماہ قبل کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا تھا، وہاں اب صورتحال ڈرامائی طور پر بدل چکی ہے اور وبا سے متاثرہ مریضوں اور اموات میں 80 فیصد کی نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔

امریکہ کے معروف جریدے وال اسٹریٹ جرنل نے پاکستان کی کورونا پر قابو پانے کے حوالے سے اقدامات پر خصوصی رپورٹ شائع کی جس میں کورونا وبا پر قابو پانے سے متعلق پاکستان کی کوششوں کی عالمی سطح پر تعریف کی گئی۔

وال سٹریٹ جرنل نے تحریر کیا ہے کہ پاکستان کے سب سے بڑے اور وائرس سے متاثرہ شہرکراچی سمیت بڑے شہروں کے ہسپتالوں میں قائم کورونا وارڈز میں جہاں کورونا سے متاثرہ بے تحاشا مریض موجود تھے اب وہاں مریضوں کی کمی کی وجہ سے بستر خالی ہو رہے ہیں۔

اخبار کا کہنا ہے کہگزشتہ دو ماہ میں ملک کے اسپتالوں میں زیرِعلاج مریضوں کی تعداد خاطر خواہ کم ہوئی، کراچی میں وینٹی لیٹرز پر موجود مریض ایک ماہ میں نصف سے بھی کم ہوگئے۔

امریکی اخبار نے اپنی رپورٹ میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے ڈبلیو ایچ او کی وارننگ کے برعکس لاک ڈاؤن کی مخالفت کی تھی اور انہوں نے لاک ڈاؤن کے اثرات کو سنگین اور خطرناک قرار دیا تھا، انہوں نے مئی میں کہاتھا کہ لاک ڈاون سے غریبوں سمیت ملکی معیشت شدید متاثر ہو رہی ہے۔ حکومت کی اسمارٹ لاک ڈاؤن کی پالیسی کے مثبت اثرات مرتب ہوئے جبکہ دوسری طرف پاکستان کے ہمسائے بھارت اور ایران بدستور کورونا وائرس سے بری طرح متاثر ہیں۔

اخبار نے لکھا ہے کہ امریکا جیسا وسائل سے مالا مال ملک بھی کورونا سے بدستور نبرد آزما ہے، جہاں کرونا وائرس کے 47 لاکھ مریض موجود ہیں اور اموات ایک لاکھ 57 ہزار تک پہنچ گئی ہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان کے ہمسایہ ممالک بھارت اور ایران میں کرونا کی صورتحال آئے روز تشویشناک ہوتی جارہی ہے۔ بھارت میں لاک ڈاؤن کے باوجود کرونا کے کیسز میں تشویشناک حد تک اضافہ ہوا ہے اور 18 لاکھ 4 ہزار کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ اموات کی تعداد 38 ہزار 161 ہوگئی ہے ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >