چین پہلی بار کورونا وائرس کی ویکسین منظرعام پر لے آیا

چین پہلی بار مقامی طور پر تیار کی گئی کورونا وائرس کی ویکسین سامنے لے آیا ہے، چینی کمپنیوں سینوویک بائیوٹیک اور سینوفارم کی مشترکا طور پر تیار کردہ یہ ویکسین رواں ہفتے بیجنگ میں ایک تجارتی نمائش کے دوران پیش کی گئی،

یہ ویکسین ابھی مارکیٹ میں نہیں لائی گئی تاہم اسے تیار کرنے والی کمپنیوں کو امید ہے کہ ویکسین کے اہم تیسرے مرحلے میں ٹرائلز کے بعد اسے رواں سال کے اختتام تک پیش کرنے کی منظوری دے دی جائے گی۔

سینوویک بائیوٹیک کے ایک نمائندے نے اے ایف پی کو بتایا کہ ان کی فرم نے پہلے ہی ایک سال میں 300 ملین خوراک تیار کرنے کے ویکسین فیکٹری کی تعمیر مکمل کرلی ہے۔ گزشتہ روز ایک تجارتی میلے میں ویکیسن کو پیش کیا گیا،

کورونا وائرس کا آغاز چین کے شہر ووہان سے ہوا تھا جس نے دیکھتے دیکھتے دنیا کو اپنی لپیٹ لے لیا،چین میں کورونا وائرس کے گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران مزید دس کیسز رپورٹ ہوئے، متاثرین کی تعداد 85,144ہوگئی جبکہ 4,634 اموات ہوچکی ہیں۔

چائنا نے اس سے ویکسین کی اجازت ملٹری استعمال کیلئے دی تھی


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >