بھارت میں کرونا نے وزیرریلوے اور بھارتی اداکارہ کی جان لے لی

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق حکمران جماعت بی جے پی کے 65 سالہ رہنما اور وزیر مملکت برائے ریلوے سریش انگاڈی نئی دہلی کے ہسپتال میں کورونا سے دم توڑ گئے۔ سریش انگاڈی میں 2 ہفتے قبل کورونا کی تصدیق ہوئی تھی اور وہ مقامی ہسپتال میں زیر علاج تھے۔

سریش انگاڈی کے انتقال پر وزیر اعظم نریندر مودی اور صدر رام ناتھ کووند نے گہرے غم اور دکھ کا اظہار کرتے ہوئے اُن کی پارٹی اور ملک کے لیے خدمات کو سراہا ہے۔ اس کے علاوہ بھارتی وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ، پیوش گوئل، راجیہ سبھا رکن پارلیمنٹ جیو ترادتیہ سندھیا اور راجستھان کے وزیراعلیٰ اشوک گہلوت نے بھی اظہار تعزیت کیا ہے۔

بھارتی پارلیمنٹ میں مون سون سیشن کا آغاز 11 ستمبر کو ہوا تھا جس کے لیے تمام ارکان اسمبلی اور اسٹاف کا کورونا ٹیسٹ کیا گیا تھا اور 30 ارکان میں کورونا کی تصدیق ہوئی تھی جن میں سریش انگاڈی بھی شامل تھے۔

دوسری جانب بھارتی فلم انڈسٹری کی اداکارہ اشلاتا وبگاؤنکر فلم کی شوٹنگ کے دوران کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کے چار روز بعد ہلاک ہو گئیں۔

79 سالہ اشلاتا رواں ماہ مراٹھی فلم کی شوٹنگ میں مصروف تھیں کہ اس دوران اُن کی طبیعت خراب ہو گئی، ڈاکٹروں کی ہدایت پر ٹیسٹ کروانے پر اداکارہ کو کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی۔ بعد ازاں شوٹنگ کے موقع پر موجود عملے کے 20 سے زائد افراد کا کورونا ٹیسٹ کیا گیا جو مثبت آیا۔

اداکارہ طبیعت خراب ہونے کے باعث گزشتہ چار روز سے نجی اسپتال میں زیر علاج تھیں تاہم وہ مہلک بیماری کو شکست دینے میں کامیاب نہ ہوسکیں اور جان کی بازی ہار گئیں۔

واضح رہے کہ اشلاتا وبگاؤنکر فلمی کیریئر میں اب تک زنجیر، کولی ، نمک حرام اور وہ سات دن سمیت کئی فلموں میں اداکاری کر چکی ہیں۔ وہ اکثروبیشتر ہیرو یا ہیروئین کی ماں کے کردار میں نظر آتی تھیں۔ فلم زنجیر میں وہ امیتابھ بچن کی منہ بولی ماں کا کردار اداکرچکی ہیں۔

یاد رہے کہ اس وقت بھارت میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 56 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے اور تاحال اس مہلک وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 90 ہزار ہے جس کے باعث بھارت دنیا میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والا امریکہ کے بعد دوسرا بڑا ملک بن گیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >