ویڈیو: انڈونیشین حکومت نے ماسک نہ پہننے والوں سے قبریں کھدوانا شروع کردیں

انڈونیشین حکومت نے اپنے اعلان پر عمل کردکھایا۔ماسک نہ پہنے والے کورونا سے مرنے والوں کی قبریں کھدوانا شروع کردیں

کچھ عرصہ قب انڈونیشین حکومت نے اعلان کیا تھا کہ ماسک نہ پہننے والوں سے قبریں کھدوائی جائیں گے۔ اندونیشیا نے اس اعلان پر عمل کردکھادیا فیس ماسک پہننے سے انکار کرنے والے افراد کو سزا کے طور پر کورونا کے باعث انتقال کرجانے والے لوگوں کی قبریں کھودنے کی سزا دی جارہی ہے، جاوا میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد میں اضافے کے بعد فیس ماسک پہننے سے انکار کرنے والے افراد کے خلاف کارروائی سخت کردی گئی ہے، ضلع سیریم میں فیس ماسک پہننے سے انکار کرنے والے افراد کو قبریں کھودنے کی سزا سنائی گئی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ ماسک نہ پہننے کی کوئی معذرت نہیں سنی جاتیں۔۔ رولز کی خلاف ورزی پر پر علامتی جیکٹ بھی پہنائی جاتی ہے،ماسک پہنو ورنہ پھر ورک کرو۔۔۔ فیس ماسک پہننے سے انکار کرنے والے افراد کو سزا کے طور پر کووڈ 19 کے باعث انتقال کرجانے والے لوگوں کی قبریں کھودنے کی سزامل رہی ہے۔

سزا پانے والے افراد دو دو کی ٹیم بناکر ایک قبر پر کام کریں گے، یعنی جب ایک قبر کھود رہا ہوگا تو دوسرا اندر سے کشادہ کررہا ہوگا۔ حکام کا کہنا ان تمام اقدمات کا مقصد لوگوں کو گھروں کے اندر رہنے پر مجبور کرنا اور کورونا وائرس سے تحفظ فراہم کرنا تھا،حکام کا کہنا ہے کہ اس طرح کی سزا سے عوام میں خوف پیدا ہوگا۔

اس سے قبل اپریل میں انڈونیشین صوبے وسطی جاوا کے علاقے سراگین ریجنسی میں پابندیوں کی خلاف ورزی کرنے والے افراد کو آسیب زدہ گھروں میں سزا کے طور پر بند کیا جانے لگا تھا،انڈونیشیا میں کورونا سے 11,844اموات اور 333,449متاثر ہوچکے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >