کیا حکومت پاکستانیوں کو کرونا ویکسین مفت مہیا کرے گی؟

ملک میں کرونا ویکسین فری آف کوسٹ فراہم کی جائے گی، پارلیمانی سیکرٹری صحت

خبر رساں ذرائع کے مطابق پارلیمانی سیکرٹری صحت ڈاکٹر نوشین حامد کا کرونا وائرس کے خلاف جاری جنگ میں خوشخبری سناتے ہوئے کہنا تھا کہ پاکستان کی عوام کو اگلے سال اپریل 2021 تک کرونا وائرس کی ویکسین فراہم کر دی جائے گی، جو پبلک سیکٹر کو فری آف کوسٹ فراہم کی جائے گی۔

پارلیمانی سیکرٹری سے ہے ڈاکٹر نوشین حامد کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی ویکسین کے پاکستان میں جاری کلینکل ٹرائلز کے بہت حوصلہ افزا نتائج سامنے آئے ہیں، امید ہے کہ 2021 کے شروع میں ویکسین عوام تک پہنچا دی جائے گی۔

انہوں نے بتایا کہ کرونا وبا کے آغاز پر چین کے تعاون سے پاکستان میں صرف ایک لیبارٹری تھی، جو اب بڑھ کر 150 سے بھی زیادہ ہو گئی ہے، اس کے علاوہ بیڈز اور وینٹی لیٹرز کی تعداد بھی بڑھا دی گئی ہے جبکہ وینٹی لیٹرز سے زیادہ ضرورت آکسیجن بیڈ کی ہے، اسی لیے حکومت نے ملک بھر کے ہسپتالوں میں 2500 آکسیجن بیڈز کا اضافہ کر دیا ہے۔

پارلیمانی سیکرٹری برائے صحت نوشین حامد کا مزید کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی ویکسین انسانی جسم میں اینٹی باڈیز پیدا کرتے ہیں جو کرونا وائرس کے خلاف قوت مدافعت پیدا کرتے ہیں، یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ کرونا کی ویکسین دنیا میں پہلی بار بنائی جا رہی ہے لہذا ابھی یہ نہیں کہا جا سکتا کہ کرونا وائرس کے مریض کو ویکسین کتنی بار لگائی جائے گی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>