چینی کمپنی کے کورونا ویکسین کے پاکستان میں ٹرائلز جاری

پاکستان کے الشفاء ہسپتال میں چین کی ایک کمپنی کی جانب سے تیار کردہ کورونا ویکسین کے ٹرائلز کیے جارہے ہیں۔

نجی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد میں واقع الشفاء ہسپتال میں چینی کمپنی کی کورونا ویکسین کو 10 ہزار سے زائد رضاکاروں پر ٹیسٹ کیا جارہا ہے۔

خبررساں ادارے کے پروگرام جیو پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے الشفاء ہسپتال کے ڈائریکٹر میڈیسن ڈاکٹر میاں امجد سہیل کا کہنا تھا کہ اس ویکسین کو دنیا بھر میں 40 ہزار سے زائد رضاکاروں پر ٹرائلز جاری ہیں جن میں پاکستان کے 10 ہزار سے زائد رضاکار بھی شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ اس وقت ٹرائلز کا تیسرا فیز ہے، اس ماہ کے آخر تک اس کے عبوری تنائج بھی سامنے آنا شروع ہوجائیں گے، ہم امید کررہے ہیں کہ آئندہ چند ماہ میں اس ویسکین سے متعلق حتمی نتائج سامنے آجائیں گے جس کے بعد ہم اس کی دستیابی سے متعلق کچھ بتا سکیں گے۔

ڈاکٹر میاں امجد سہیل نے کہا کہ یہ ویکسین کورونا وائرس کا علاج نہیں ہے، جو لوگ کورونا میں مبتلا ہوچکے ہیں یہ ان کیلئے کارآمد نہیں ہوگی، کیونکہ یہ ویکسین ہے جو آپ کو بیماری لگنے سے محفوظ بناتی ہے، یہ احتیاطی تدبیر ہے، جس کو کورونا ہوچکا ہے اس کے جسم میں اینٹی باڈیز بن چکی ہوتی ہیں اس کو اس ویکسین کی ضرورت نہیں ہوتی، یہ ویکسین انہیں کیلئے ہے جنہیں ہم کورونا سے بچانا چاہتے ہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>