نئے سال کے پہلے روز پاکستان میں کرونا وائرس کی کیا صورتحال رہی؟

دوہزار اکیس کے آغاز میں کورونا کے وارمزید تیز ہوگئے، ایک روز میں اکہتر افراد زندگی کی بازی ہار گئے،قاتل وائرس سےگزشتہ سال دس ہزار ایک سو چہتر اموات ہوئیں، نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹرکے اعداد وشمارکے مطابق 2020 کے آخری روز کورونا وائرس سے پنجاب میں 29 ،سندھ میں 27 اورخیبرپختونخوہ میں 11 مریض چل بسے۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 2 ہزار 463 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے ہیں،پاکستان میں مصدقہ مریضوں کی تعداد 4 لاکھ 82 ہزار 178 ہوگئی ہے۔

2020 کے آخری روز41ہزار39 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 2ہزار463 پازیٹٰو رپورٹ ہوئے، سندھ 2لاکھ 15ہزار679 متاثرین کے ساتھ سرفہرست ، پنجاب1لاکھ 38ہزار608 ،خیبرپختونخوا 58ہزار701،اسلام آباد 37ہزار888 اوربلوچستان میں یہ تعداد 18ہزار168 ہو چکی ہے۔

اسوقت ملک کے مختلف اسپتالوں میں 2ہزار693مریض زیرعلاج ہیں جبکہ 300 وینٹی لیٹرپرموجود ہیں،کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد34ہزار773 ہوگئی جبکہ کورونا سے ایک دن میں 2 ہزار 156 مریض صحت یاب ہوئے جس کے بعد صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 4 لاکھ 37 ہزار 229 ہوگئی۔

دوسری جانب پشاور میں شہری کو نہ جانے کیا ہوا نیو ایئر کی رات خوفناک ماسک پہن کر لوگوں کو ڈراتا رہا،شاہ قبول تھانے میں ڈراؤنا ماسک پہننے والے نوجوان کو گرفتار کرلیا گیا، پولیس کے مطابق نوجوان نے بچوں اور خواتین کو ڈرایا جس پر خواتین نے علاقے میں موجود پولیس اہلکار کو شکایت کی جس پر پولیس نے فوری نوجوان کودھر لیا۔

ملک بھر کی طرح خیبرپختونخوا میں بھی سال نو کی خوشیاں منانے کیلئے ایس او پی پر عملدرآمد کے احکامات جاری کئے گئے تھے،اور کہا تھا کہ نئے سال کی خوشی اس انداز میں منائی جائے کہ کسی کو تکلیف نہ پہنچے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>