چین کا پاکستان کو کرونا ویکسین کی پہلی کھیپ مفت فراہم کرنے کا اعلان

چین کا پاکستان کو کرونا ویکسین کی پہلی کھیپ مفت فراہم کرنے کا اعلان

چین نے پاکستان کو کرونا ویکسین کی پہلی کھیپ مفت فراہم کرنے کا اعلان کر دیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق چین کی وزارت خارجہ کی ترجمان کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہنا تھا کہ چونکہ پاکستان اور چین دونوں ممالک مل کر طویل عرصے سے کرونا وائرس کی وبا پر قابو پانے کے لیے اقدامات کر رہے ہیں، اسی لئے چین پاکستان کو کرونا وائرس کی ویکسین کی پہلی کھیپ مفت فراہم کرے گا۔

چین کی وزارت خارجہ کی ترجمان ہوا چونئنگ کا میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے مزید کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی ویکسین کی پہلی کھیپ چینی حکومت کی جانب سے پاکستانی بھائیوں اور بہنوں کے لیے تحفہ ہو گی، جو دونوں ممالک کے درمیان قائم طویل المدتی تعلقات کی واضح مثال ہے۔

وزارت خارجہ کی ترجمان کا میڈیا سے گفتگو میں بتانا تھا کہ کرونا وائرس کی ویکسین پاکستان کو ایکسپورٹ کرنے کے لیے تیز رفتار منصوبے پر کام جاری ہے، چینی وزارت خارجہ کی ترجمان نے پریس بریفنگ کے دوران یہ نہیں بتایا کرونا وائرس کی کونسی ویکسین اور کتنی مقدار میں پاکستان کو بھیجی جائے گی۔

خیال رہے کہ پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اسی حوالے سے اپنے چینی ہم منصب سے ٹیلیفونک رابطہ کیا تھا، جس کے بعد انہوں نے اعلان کیا تھا کہ چینی وزیر خارجہ نے پاکستان کو کرونا وائرس کی ویکسین کی پانچ لاکھ خوراکیں 31 جنوری تک بطور تحفہ دینے کا وعدہ کیا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹویٹ میں یہ امکان ظاہر کیا تھا کہ چین کی جانب سے جو کرونا وائرس کی ویکسین پاکستان کو فراہم کی جائے گی وہ چینی کمپنی سائنو فارم کی ہوگی، واضح رہے کہ ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان (ڈریپ) نے بھی گزشتہ ماہ ملک بھر میں چینی کمپنی سائنو فارم کی کورونا ویکسین کے ہنگامی استعمال کی اجازت دی تھی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >