چین سے ویکسین ملنے کے بعد پاکستان میں انسدادکرونا مہم کب شروع ہوگی؟

وفاقی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ ملک بھر میں انسداد کورونا مہم 3 فروری سے شروع کی جائے گی۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وفاقی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ کورونا وائرس کی پہلی کھیپ کورونا وائرس کے خلاف فرنٹ لائن پر لڑنے والے ہیلتھ ورکرز کو لگائی جائے جس کی باقاعدہ مہم 3 فروری سے شروع کی جائے گی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(این سی او سی) کے مطابق حکومت نے ملک میں کورونا ویکسین سے متعلق حکمت عملی تیار کرلی ہے، گزشتہ رات پاک فضائیہ کا خصوصی طیارہ چین سے ویکسین کی پہلی کھیپ لے کر پاکستان پہنچ چکا ہے۔

این سی او سی کے مطابق کورونا ویکسین کو ای پی آئی کے مرکزی اسٹوریج سینٹر میں منتقل کیا جائے گا، ہیلتھ گائیڈ لائنز کے مطابق ویکسین کو وفاقی اکائیوں میں تقسیم کیا جائے گا، ویکسین کی ترسیل کے پلان کو حتمی شکل دیدی گئی ہے۔

این سی او سی کا کہنا ہے کہ وقت اور ویکسین کی صحت کا خیال رکھتے ہوئے سندھ ، بلوچستان اور گلگت بلتستان کو طیاروں میں ویکسین فراہم کی جائے گی، تمام فریقین کے مشاورت سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ پہلی کھیپ کورونا کے خلاف جنگ لڑنے والے فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کو لگائی جائے، اصل ہیروز یہی ہیلتھ ورکرز ہیں جو اس جنگ میں لڑرہے ہیں۔

ملک بھر میں ویکسینیشن سینٹرز قائم کردیئے گئے ہیں، پہلے مرحلے میں پنجاب میں 189، کے پی کے میں 280، سندھ میں0 14، بلوچستان میں 44، اسلام آباد میں 14، کشمیر میں 25 جبکہ گلگت بلتستان میں 16 ویکسی نیشن سینٹر قائم کیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ چین کی جانب سے پاکستان کو عطیہ کے طور پر دی گئیں 5 لاکھ کورونا ویکسین کی خوراکیں پاکستان پہنچ گئی ہیں جنہیں پاک فضائیہ کے خصوصی طیارے آئی ایل78 کی مدد سے نورخان ایئر بیس پر لا کر معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان کے حوالے کیا گیا۔

اس حوالے سے ویکسین کی وصولی کے بعد معاون خصوصی ڈاکٹر فیصل سلطان نے اپنے ٹوئٹر پیغام کے ذریعے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ الحمد اللہ ہمیں سینوفرم ویکسین کا پہلا بیچ ملا ہے، اس کے لئے انتھک محنت کرنے والے ہر شخص کا شکر گزار ہوں۔ کورونا کا مقابلہ کرنے میں این سی او سی اور صوبوں نے اہم کردار ادا کیا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >