اندھیرنگری چوپٹ راج، کراچی کے نجی اسپتال میں روسی ویکسین کے نام پر لوٹ مار

کراچی کے نجی اسپتال میں روسی ویکسین کے نام پر لوٹ مار

ملک بھر میں کورونا ویکسی نیشن کا عمل جاری ہے،شہرقائد میں ویکیسن کے نام پر فراڈ ہونے لگا، کراچی کےنجی اسپتال روسی ویکسین لگانے کے من مانی قیمت وصول کی جارہی ہے، اسپتال انتظامیہ ایڈمنسٹریٹو چارجز کے نام پر ڈھائی ہزار روپے علیحدہ کمیشن وصول کررہی ہے۔

شہریوں سے لوٹ مار کرنے والے نجی اسپتال میں ویکسی نیشن کے لیے اسپتال انتظامیہ نے بکنگ کا آغاز کردیا،روسی کووڈ ویکسین کی سنگل ڈوز 6 ہزار 134 روپے میں لگائی جارہی ہے اور اس پر ڈھائی ہزار روپے ویکسین ایڈمنسٹریٹو چارجز علیحدہ وصول کیے جارہے ہیں۔

روسی ویکسین کی ڈبل ڈوز کے چارجز 12 ہزار 268 روپے لیے جارہے ہیں جبکہ ویکسینشن کروانے والوں کو ڈبل ڈوز کے ویکسین ایڈمنسٹریٹو چارجز بھی ڈبل 5 ہزار روپے ادا کرنے ہونگے۔

پالیسی کے مطابق ویکسی نیٹر کیلئے 15 فیصد چارجز ویکسین کی قیمت میں ہی شامل ہوتے ہیں،کوویڈ ویکسین کی قیمتوں کے تعین کا معاملہ عدالت میں زیر سماعت ہے، معاملہ عدالت میں ہونے کے باعث تاحال حکومت نے ویکسین کی قیمت مقرر نہیں کی۔

کراچی میں کورونا کےوار اب بھی جاری ہیں ، گذشتہ چوبیس گھنٹے میں وائرس کے مزید 237 کیسز اور 2 اموات رپورٹ کی گئیں،کراچی کےضلع شرقی سے کورونا کے61 کیسز، ملیرسے22، جنوبی سے 20، کورنگی سے 9، ضلع وسطی سے 5، غربی سے 2 نئے کیسز سامنےآئے،حکومت کےمطابق سندھ میں کورونا کے ابتک 2 لاکھ 65 ہزار 916 کیسز رپورٹ جبکہ اموات کی مجموعی تعداد 4 ہزار 504 ہوچکی ہے۔

  • یہ تو ہونا تھا آپ دیکیھے گا سندھ میں لوگوں کو پانی کے ٹیکے لگا کر ویکسین کے پیسے لے لینے ہیں ان زرداریوں نے اور ان کے حواریوں نے اور اس سب کا ذمہ دار سندھ کی عدالتیں ہیں جو انہیں مادر پدر آزاد کرتی ہیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >