کورونا وائرس کے حملے تیز ہونے لگے ،اموات میں ریکارڈ اضافہ، 200 سے زائد مریض جاں بحق

کورونا وائرس خطرناک قاتل وائرس بن گیا، ایک روزمیں ریکارڈ 201 اموات رپورٹ ہوئیں سب سے زیادہ پنجاب اور پھر خیبرپختوخوا میں مریض جان کی بازی ہارگئے ،سندھ اور اسلام آباد میں بھی صورتحال تشویشناک ہے ، گزشتہ ایک روزمیں 5292 نئے کیسزرپورٹ، مثبت کیسزکی شرح 10.77 تک پہنچ گئی ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹرکےاعداد وشمارکے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں میں ریکارڈ201اموات ہوئیں،پنجاب میں127اموات،خیبرپختونخوا 45 سندھ میں19، اسلام آبادمیں5 اورآزادکشمیرمیں4مریض جان کی بازی ہارگئے،مجموعی اموات17ہزار530ہوگئیں ،اسوقت اسپتالوں میں6ہزار286مریض زیرعلاج ہیں جبکہ664مریض وینٹی لیٹرپر موجود ہیں

گذشتہ 24 گھنٹوں میں 49ہزار101ٹیسٹ کیےگئے جن مین سے5ہزار292 کیسزپازیٹیوآئے ، لاہور75،ملتان 74اورمردان میں 73فیصد وینٹی لیٹربھرگئے ہیں جبکہ گجرانوالہ 98،ملتان 76اورپشاور72 فیصد آکسیجن بیڈ پرمریض موجود ہیں ملک میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 88ہزار207تک پہنچ گئی ہے۔

دوسری جانب لاک ڈاوٴن کے حوالے سے این سی او سی کی جانب سے متعلقہ وزارتوں کو مراسلہ ارسال کردیا گیا، مراسلے کے مطابق لاک ڈاوٴن کا نفاذ 2 یا 3 مئی سے ہونے کا امکان ہے۔

مراسلے میں کہا گیاکہ این سی او سی نے متعلقہ وزارتوں کو پلاننگ کرنے کی ہدایات جاری کر دی،ان اضلاع وشہروں میں اسلام آباد،،راولپنڈی،لاہور،ملتان،، فیصل آباد ، گوجرنوالہ میں دو ہفتوں کا لاک ڈاوٴن لگایا جائے گا۔

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ بہالپور،حیدرآباد،لوئر دیر،مردان، نوشہرہ ، مالا کنڈ، چارسدہ میں لاک ڈاوٴن کے حوالے سے حساس شہروں کی لسٹ میں شامل ہیں،سوات،صوابی، مظفرآباد، سدھنوتی،،پونچھ اور باغ میں بھی لاک ڈاوٴن لگانے پرمشاورت کی گئی ہے،ان شہروں میں کورونا پھیلاؤ روکنے کے مناسب اقدامات کو یقینی بنانے کی بھی ہدایت کی گئی ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>