ڈریپ نے کورونا کے علاج میں استعمال ہونیوالی ادویات کی قیمتوں کا تعین کر دیا

ڈریپ نے کورونا وائرس کے علاج میں استعمال ہونے والی ادویات کی قیمتوں کا تعین کر دیا

ڈریپ (ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان) نے کورونا وائرس کے علاج میں استعمال ہونے والی ادویات کو زائد نرخوں پر بیچنے والوں کو قابو کرنے کے لیے ادویات کی قیمتوں کا تعین کر دیا۔

وائرس سے متاثرہ لوگوں کے علاج میں استعمال ہونے والی ادویات کی قیمتیں ڈریپ نے اپنی آفیشل ویب سائٹ پر جاری کر دی جس کا مقصد زائد قیمت پر ادویات کی فروخت کی روک تھام یقینی بنانا ہے۔

ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان کے سی ای او ڈاکٹر عاصم رؤف کا کہنا ہے کہ کورونا کی مختلف مقدار اور کمپنیز کی 36 ادویات ‏کی قیمتیں مقرر کی ہیں جن میں اینٹی وائرل انجیکشنز، اینٹی بائیوٹک ٹیبلٹس اور کیپسول وغیرہ شامل ہیں۔ زائد قیمت پر ادویات کی فروخت خلاف قانون تصور کی جائے گی۔

سی ای او ڈاکٹر عاصم کے مطابق ‏زائد قیمت پر فروخت اور بلیک مارکیٹنگ کرنے والوں کو سخت سزائیں دی جائیں گی، کورونا ادویات سے متعلق شکایات اور ‏رہنمائی کیلئے فوکل پرسن مقرر ہیں شہری خریداری سے قبل فوکل پرسنز سے ادویات کی قیمت ‏معلوم کریں۔

ڈریپ کی ویب سائٹ پر جاری کردہ فہرست کے مطابق کورونا سے متعلقہ 27 انجکشنز، 7 ٹیبلٹس، 2 کیپسولز کی قیمت مقرر کی گئی ہے۔ ‏ریمیڈیسویر، ایکٹیمرا انجیکشن کی زیادہ سے زیادہ قیمت مقرر کی گئی۔ ایکٹیمرا 200 ایم جی ‏انجکشن کی قیمت 39ہزار 689 کر دی گئی ہے۔

جبکہ ایکٹیمرا 400 ایم جی انجکشن کی قیمت 79ہزار 378 اور ریمیڈیسویر انجکشن کی قیمت 5ہزار 680 روپے ‏مقرر کی گئی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >