وفاقی حکومت کی جانب سے ملنے والی ویکسین پر سندھ حکومت کی اپنی تشہیر

وفاقی حکومت کی جانب سے ملنے والی ویکسین پر سندھ حکومت کی اپنی تشہیر

وفاقی حکومت کیا جانب سے سندھ کو کورونا کے مریضوں کیلئے آکسفورڈ یونیورسٹی کی تیار کردہ ایسٹرازینکا ویکسین کی خوراکیں دی گئیں تو سندھ میں بھی ویکسین لگانے کا عمل شروع ہو گیا۔ مگر اس پر سندھ حکومت نے اپنی روایتی خیانت کا طریقہ اپناتے ہوئے اپنی تشہیر شروع کر دی ہے۔

وزیراعظم کے فوکل پرسن برائے ڈیجیٹل میڈیا ڈاکٹر ارسلان خالد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کہا کہ وفاقی حکومت کی طرف سے دی گئی ویکسین کو لگاتے ہوئے سندھ حکومت اپنی تصویریں کس خوشی میں لگا رہی ہے؟

ارسلان خالد نے مزید کہا کہ سندھ حکومت ویکسین کی ایک خوراک بھی خود نہیں منگوا سکی اور باقی صوبوں کی طرح سندھ کو بھی وفاق نے ہی تمام ویکسین مہیا کی ہے۔ وفاقی حکومت اپنی ذمہ داری نبھا رہی اور یہ اپنی تصویریں لگا رہے ہیں۔

یاد رہے کہ پاکستان کورونا وائرس سے متعلق عالمی اتحاد کوویکس کا رکن ملک ہے اور اس اتحاد یعنی کوویکس کے زیر انتظام پاکستان کی 20 فیصد آبادی کو مفت ویکسین فراہم کی جائے گی۔

ایسٹرازینکا کورونا ویکسین کی پہلی کھیپ پاکستان پہنچ گئی ہے، جو کہ کوویکس کی فراہم کردہ مفت کورونا ویکسین ہے۔ 12 لاکھ 38 ہزار کورونا ویکسین ڈوزز غیر ملکی ایئرلائن سے پاکستان پہنچائی گئیں تھیں، وزارت صحت کے مطابق کوویکس کی فراہم کردہ کورونا ویکسین جنوبی کوریا کی تیارکردہ ہے۔

دوسری جانب برطانوی محکمہ صحت کی ویکسی نیشن کمیٹی نے گائیڈ لائنز جاری کرتے ہوئے 40 سال سے کم عمر مرد اور خواتین کو ایسٹرا زینکا ویکسین لگانے سے روک دیا ہے، جب کہ اس سے پہلے 40 سال سے کم عمر کی صرف خواتین کو ایسٹرازینکا ویکسین نہ لگانے کی گائیڈلائن جاری کی گئی تھیں۔

  • زرداری نے بھٹو کے پورے خاندان اور پارٹی پہ قبضہ کر رکھا ہے تو ویکسینیشن کا کریڈٹ لینے میں مانع ہے؟


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >