عید الفطر کے بعد پاکستان میں کرونا کی صورتحال کیا رہی؟

لاک ڈاؤن، سماجی فاصلے اور ماسک کے فیصلے پر سختی سے علمدرآمد کے مثبت نتائج سامنے آنا شروع ہوگئے۔ عید کے ایام میں ملک بھر میں لاک ڈاؤن کے باعث کیسز اور اموات میں نمایاں کمی دیکھنے کو ملی ۔

عالمی وبا کورونا وائرس کے سبب پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 76 اموات اور 2 ہزار 379 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے مطابق ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 30 ہزار 402 کرونا ٹیسٹ کیے گئے، جن میں سے کرونا کے 2 ہزار 379 کیسز مثبت رپورٹ ہوئے۔

این سی او سی کے مطابق 24 گھنٹوں میں کرونا کے ٹیسٹ مثبت آنے کی شرح 7.82 فی صد رہی، اب تک 1 کروڑ 24 لاکھ 44 ہزار 42 کرونا ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک سندھ میں 2 لاکھ98 ہزار 078 ، پنجاب میں 3 لاکھ 25 ہزار 662، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 26 ہزار 787، اسلام آباد میں 79 ہزار 123، بلوچستان میں 23 ہزار 831 ، آزاد کشمیر میں 18 ہزار 231 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار 418 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق لاہور میں کورونا مثبت کیسز کی شرح خطرناک حد تک بڑھ گئی، گزشتہ 24گھنٹوں کےدوران کورونا مثبت کیسز کی شرح 23 اعشاریہ 53 فیصد رہی۔

پنجاب میں کورونا مثبت کیسز کی شرح8اعشاریہ 34 فیصد رہی، پنجاب میں24گھنٹوں کےدوران کوروناسے45 جبکہ پنجاب کے دارالحکومت لاہورمیں20 افراد جان سے ہاتھ دھوبیٹھے۔

ترجمان محکمہ صحت پنجاب کے مطابق صوبے میں گزشتہ24گھنٹوں کے دوران کورونا کے 12 ہزار 862 ٹیسٹ کئے گئے جن میں سے 1073مثبت کیسز پورٹ ہوئے جبکہ لاہورمیں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ہزار 847 ٹیسٹ کئے گئے، جن میں سے 670 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے۔

دوسری جانب کوئٹہ سمیت بلوچستان میں کورونا وائرس کے مثبت کیسز کی شرح میں واضح کمی ریکارڈ کی گئی ہے ۔گزشتہ روز بلوچستان میں کورونا وائرس کے مثبت کیسز کی شرح 3 اعشاریہ 40 فیصد ریکارڈ کی گئی۔

خیال رہے کہ 2 روز قبل بلوچستان میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 8 اعشاریہ 78 فیصد ریکارڈ کی گئی تھی،جبکہ 3 روز قبل بلوچستان میں کورونا کیسز کی شرح 8 اعشاریہ 07 فیصد تھی۔

  • So far Pakistan’s achievements in containing Covid-19 is incomparable with India.
    Great advance planning & execution by great eldership, unlike Modi & India, was the key to this success….credit goes to NCOC & PTI govt.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >