جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کورونا کا شکار ہونے کے بعد ڈاکٹروں کی مسلسل نگرانی میں

آج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی طبعیت ناساز ہونے کی خبریں ایک چینل پر چلیں تو سوشل میڈیا پر طوفان برپا ہوگیا، کچھ چینلز اور سوشل میڈیا صارفین نے یہ خبریں دینا شروع کردیں کہ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی حالت تشویشناک ہے۔

اس پر سپریم کورٹ کے ذرائع کی جانب سے ردعمل سامنے آگیا ہے۔ ذرائع کے مطابق سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی طبیعت کورونا وائرس کا شکار ہونے کے بعد اب مسلسل ڈاکٹروں کی نگرانی میں ہیں۔ن کی طبیعت بدھ کے مقابلے میں مستحکم ہے

ذرائع کے مطابق جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور ان کی اہلیہ کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے جس کے بعد وہ دونوں اپنے گھر میں ہی قرنطینہ کیے ہوئے ہیں۔جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور انکی اہلیہ بھارتی قسم کے ڈیلٹا ویرینٹ کا شکار ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ رات جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور ان کی اہلیہ سرینا عیسیٰ کی طبیعت بگڑنے کی اطلاعات موصول ہوئیں، جسٹس قاضی فائز عیسی کو ہسپتال لے جایا گیا جہاں ان کی سکریننگ کی گئی جبکہ سرینا عیسیٰ کو بذریعہ ڈرپس 2 بار میڈیسن دی گئی۔

رپورٹس کے مطابق جسٹس قاضیٰ فائز عیسیٰ اور ان کی اہلیہ اس وقت ڈاکٹروں کی مسلسل نگرانی میں ہیں۔ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ اور انکی اہلیہ کی حالت تشویشناک ہونے کی خبریں درست نہیں ہیں اور نہ ہی وہ ہسپتال میں داخل ہیں۔

واضح رہے کہ جسٹس قاضیٰ فائز عیسیٰ نے گزشتہ دنوں جوڈیشل کمیشن کا آن لائن سیشن اٹینڈ کیا تھا جو ڈھائی گھنٹے پر محیط تھا، اجلاس میں بولتے ہوئے جسٹس عیسیٰ کو سینے میں شدید تکلیف کا سامنا کرنا پڑا جس کے بعد ان کی سکریننگ کی گئی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >