زبردستی کورونا ویکسین لگانے کے خلاف شہری نے عدالت سے رجوع کرلیا

زبردستی کورونا ویکسین  لگانے کے خلاف شہری نے عدالت سے رجوع کرلیا

اسلام آباد ہائی کورٹ میں ایک شہری نے حکومت کی جانب سے زبردستی کورونا ویکسین لگائے جانے کے خلاف درخواست دائر کردی ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق حکومت کی جانب سے ملک کے ہر شہری کو کورونا ویکسین لگانے کیلئے مختلف اقدامات کیے جارہے ہیں جن میں سفری پابندیاں ،موبائل سمز اور شناختی کارڈ بلاک کردینے جیسے اقدامات شامل ہیں۔

ان حکومتی اقدامات کے خلاف اسلام آباد ہائ کورٹ میں شاہینہ شباب الدین نامی ایک شہری نے درخواست دائر کی اوراستدعا کی کہ عدالت حکومت کو زبردستی شہریوں کو ویکسین لگانے سے روکے۔

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا ہے کہ زبردستی ویکسین لگانا نہ صرف انسانی حقوق بلکہ اسلامی روایات کے بھی خلاف ہے لہذا اسے مسترد کیا جانا چاہیے ۔

درخواست گزار نے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر، وزارت صحت، پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی سمیت دیگر متعلقہ محکموں کو فریق بنایا ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست کو سماعت کیلئے مقرر کردیا گیا ہے اور چیف جسٹس اطہر من اللہ اس درخواست پر کل سماعت کریں گے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >